Page 4 of 7 FirstFirst 1234567 LastLast
Results 31 to 40 of 69

Thread: Celebrity World ...... فنکاروں کی دنیا

  1. #31
    pinkbaby's Avatar
    pinkbaby is offline Premium Member
    Join Date
    Feb 2014
    Age
    42
    Posts
    240
    Thanks
    0
    Thanked 711 Times in 185 Posts
    Time Online
    1 Day 7 Hours 51 Minutes 23 Seconds
    Avg. Time Online
    1 Minute 13 Seconds
    Rep Power
    496

    Default

    دیکھو دیکھو کون آیا۔۔۔۔۔۔۔۔ پنک بے بی آیا پنک بے بی آیا

  2. The Following 2 Users Say Thank You to pinkbaby For This Useful Post:

    panjabikhan (11-05-2018), shubi (17-05-2018)

  3. #32
    pinkbaby's Avatar
    pinkbaby is offline Premium Member
    Join Date
    Feb 2014
    Age
    42
    Posts
    240
    Thanks
    0
    Thanked 711 Times in 185 Posts
    Time Online
    1 Day 7 Hours 51 Minutes 23 Seconds
    Avg. Time Online
    1 Minute 13 Seconds
    Rep Power
    496

    Default

    دیکھو دیکھو کون آیا۔۔۔۔۔۔۔۔ پنک بے بی آیا پنک بے بی آیا

  4. The Following User Says Thank You to pinkbaby For This Useful Post:

    panjabikhan (11-05-2018)

  5. #33
    Lovelymale's Avatar
    Lovelymale is offline Premium Member
    Join Date
    Aug 2008
    Location
    Islamabad, Pakistan, Pakistan
    Age
    54
    Posts
    2,037
    Thanks
    14,315
    Thanked 7,166 Times in 1,832 Posts
    Time Online
    2 Weeks 3 Days 7 Hours 23 Minutes 2 Seconds
    Avg. Time Online
    10 Minutes 42 Seconds
    Rep Power
    1050

    Default

    Zabardast update thi, boht hot. Agay agay dekhtay hain hota hai kia . . .

  6. #34
    Prince-wafa is offline Premium Member
    Join Date
    Jul 2015
    Posts
    23
    Thanks
    7
    Thanked 15 Times in 9 Posts
    Time Online
    5 Days 12 Hours 50 Minutes 52 Seconds
    Avg. Time Online
    7 Minutes 41 Seconds
    Rep Power
    6

  7. #35
    aftabmehmood is offline Premium Member
    Join Date
    Jun 2009
    Posts
    19
    Thanks
    38
    Thanked 10 Times in 5 Posts
    Time Online
    2 Days 2 Hours 15 Minutes 40 Seconds
    Avg. Time Online
    1 Minute 17 Seconds
    Rep Power
    11

    Default

    very gooood kamaaal kr diya bhai ji toooogud kafi taime k bad koi story update hui ab is ko mukamal krna bhai g

  8. #36
    pinkbaby's Avatar
    pinkbaby is offline Premium Member
    Join Date
    Feb 2014
    Age
    42
    Posts
    240
    Thanks
    0
    Thanked 711 Times in 185 Posts
    Time Online
    1 Day 7 Hours 51 Minutes 23 Seconds
    Avg. Time Online
    1 Minute 13 Seconds
    Rep Power
    496

    Default

    ندا یاسر دانش نواز کے ساتھ اپنے بیڈروم سے باہر نکلی تو دیکھا کے سامنے صوفے پر فضا علی بیٹھی ہوئی تھی ۔۔ آپ لوگ جانتے ہی ہیں نا فضا علی کو ۔۔ خوبصورت ، دراز قد، گوری چٹی اور سیکسی لباس پہن کر ایک انعامی گیم شو ہوسٹ کرتی ہے ایک چینل پر ۔۔۔ وہ بھی ندا یاسر کی بہت اچھی دوست تھی ۔۔ اس نے دونوں دیور بھابی کو ایک بیڈروم سے باہر آتے دیکھا تو شرارتی نظروں سے ان دونوں کو دیکھنے لگی ۔۔ ندا یاسر کی نظر اس سے ملی تو فضا نے اسے آنکھ مار دی ۔۔ ندا یاسر اسکی نظروں کا مطلب سمجھتی ہوئی مسکراتی ہوئی اسکی طرف بڑھی ۔۔ تو فضا علی نے دانش نواز کی نظربچا کر ندا یاسر کو اشاروں میں کچھ پوچھا ۔۔ تو ندا یاسر اسکے پاس بیٹھتی ہوئی اسکے بازو پر پیار سے ایک تھپڑ مارتی ہوئی بولی ۔۔ ایسی ویسی کوئی بات نہیں بدتمیز ۔۔ تم کو تو ہر وقت یہی سوجھتا رہتا ہے ۔۔ میں کوئی تمھاری طرح کی نہیں ہوں ۔۔ یہ باتیں دونوں دھیرے دھیرے کر رہے تھے ۔۔
    ندا یاسر بولی ۔۔ یار تم کیسے آئی ہو ۔۔
    فضاعلی ۔۔ یار وہ جیا نے مجھے کہا کہ تم ادھر سے آرہی ہو تو تمھارے گھر سے اس نمونے کو لیتی آؤں ۔۔ فضا علی نے ارشد چائے والے کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا ۔۔
    ارشد خان کو نمونہ کہنے پر ندا یاسر ہنس پڑی ۔۔ نمونہ شمونہ نہیں ہے بڑی چیز ہے یہ لڑکا ۔۔
    فضا مسکرائی اور پھر دھیرے سے بولی ۔۔ لگتا ہے تم نے اسے چیک کر لیا ہے ۔۔ بتاؤ نا کیسا ہے اسکا ۔۔
    ندا یاسر مسکرائی ۔۔ خود ہی چیک کر لینا مجھے کیا پوچھتی ہو ۔۔ دونوں ہنسنے لگیں ۔۔
    فضا علی پھر دھیرے سے بولی ۔۔ اور یہ تمھارے دیور جی کیسے ہیں ۔۔ انکو تو ضرور چود چکی ہو گی تم نا ۔۔
    ندا یاسر بھی دھیرے سے بولی ۔۔ ابھی تک تو نہیں ۔۔ لیکن شائد تمھارے جانے کے بعد۔۔ دونوں پھر ہنسنے لگیں ۔۔
    تھوڑی دیر کے بعد فضا علی ارشد خان کو لے کر چلی گئی ۔۔ اور ندا یاسر انکو گیٹ رک چھوڑ کر واپس آئی تو سامنے صوفے پر دانش نواز اپنی پینٹ کی زپ کھول کر اپنا لوڑا باہر نکال کر اسے سہلا رہا تھا ۔۔ جو بلکل اکڑ کر تیار کھڑا تھا ۔۔
    ندا یاسر مسکرائی ۔۔ لگتا ہے آج ہی تم اپنا کام پورا کر لینا چاہتے ہو ۔۔ بخشو گے نہیں آج کا دن مجھے ۔۔
    دانش نواز مسکرایا ۔۔ بھابی جی اتنے دن کے بعد تو آج موقع ملا ہے تو کیسے روک سکتا ہوں خود کو ۔۔
    ندا یاسر کی نظریں بھی اپنے دیور کے لوڑے پر تھیں ۔۔ جو اسکے ہاتھوں میں مچل رہا تھا ۔۔ انکار کرنے کا دل تو ندا یاسر کا بھی ہو رہا تھا ۔۔ وہ دھیرے دھیرے دانش نواز کی طرف بڑھی ۔۔ اور صوفے پر اسکے قریب بیٹھ کر اپنا ہاتھ اسکے لوڑے کی طرف بڑھایا ۔۔ اور اسکے لوڑے کو اپنے ہاتھ میں لے کر بولی ۔۔ بہت اکڑ گیا ہوا ہے ۔۔ ویسے یہ میری وجہ سے ہے یا فضا کی وجہ سے ۔۔
    دانش کھسیانا سا ہو کر بولا ۔۔ بھابی جی سچ کہوں تو فضا علی بھی تو ایک آئٹم ہے نا ۔۔ اسکو بھی چودنے کا من کرتا ہے ۔۔ کبھی اسکے ساتھ بھی میرے سیٹنگ کروا دو نا ۔۔
    ندا یاسر دانش نواز کے لوڑے پر ایک ہلکا سا تھپڑ مارتی ہوئی بولی ۔۔ ابھی میرے ساتھ کچھ کیا نہیں اور آگے کی سیٹنگ کروانے کے لیے مجھے بول رہے ہو ۔۔ بے شرم ۔۔
    دانش نواز نے ایک جھٹکے سے ندا یاسر کو اپنی بانہوں میں لے کر اپنے سینے سے لگایا ۔۔ اور بولا آپ کو تو سمجھو اب چود کر ہی چھوڑوں گا نا ۔۔
    ندا یاسر نے بھی مسکرا کر اپنی بانہیں اپنے دیور کے گلے میں ڈال دیں ۔۔ دانش نواز صوفے پر سے اُٹھا ۔۔ اور اپنی بھابی کو اپنی بانہوں میں اُٹھا لیا ۔ اور اسکے بیڈروم کی طرف چل پڑا ۔۔ ندا یاسر نے بھی ہنستے ہوئے اپنے بازو اسکے گلے میں ڈال کر خود کو سہارا دیا۔۔ اندر کمرے میں آکر دانش نے ندا یاسر کو اسکے بیڈ پر بٹھایا۔۔ اور خود بھی اوپر چڑھ آیا ۔۔
    دونوں دیور بھابی بیڈ پر گھٹنوں کے بل کھڑے ہو کر ایکدوسرے کو چومنے لگے ۔۔ ایک دوسرے کے ہونٹوں کو چوسنے لگے ۔۔۔ ندا یاسر کے ہونٹوں کو چومتے ہوئے دانش نے ندا کی شرٹ کو نیچے کو سرکا دیا ۔۔۔ اور ساتھ میں اسکی برا کے سٹریپس بھی اسکے کندھوں سے نیچے سرکا دیئے ۔۔ ندا یاسر کے گورے گورے ممے ننگے ہو گئے ۔۔۔ دانش نواز نے جھک کر ایک ممے کو منہ میں لیا اور چوسنے لگا ۔۔۔ اسکا دوسرا ہاتھ ندا یاسر کی ٹائٹ لیگی کے سنگم پر سے اسکی چوت کو سہلا رہا تھا ۔۔
    کچھ دیر کے بعد دانش ندا یاسر سے علیحدہ ہوا ۔۔ اور اسکی شرٹ کو اتار دیا ۔۔ اور ساتھ ہی اسکی لیگی بھی اتار کر اپنی بھابی ۔۔ اور پورے ملک کے لڑکوں کے دلوں کی دھڑکن کو ننگی کر لیا ۔۔ جلدی سے اپنے کپڑے بھی اتارے اور خود بھی بلکل ننگا ہو گیا۔۔۔ پھر دانش نے ندا یاسر کو بیڈ پر لٹایا ۔۔ اور خود اسکی ٹانگوں کو کھول کر اسکی چوت پر جھک گیا ۔۔ ندا یاسر کی گلابی چوت اپنے لب کھولے ہوئے اپنے دیور کی ہوس بھری نظروں کے سامنے تھی ۔۔ دانش نواز نے اپنے بھائی کی بیوی کی چوت کو ایک چما دیا ۔۔ اور بولا ۔۔ بھابی بہت مست چوت ہے آپکی تو ۔۔
    ندا یاسر مسکرائی اور اپنا ہاتھ بڑھا کر دانش نواز کے گھنگریالے بالوں میں رکھ کر اسکے منہ کو اپنی چوت کی طرف کھینچ لیا۔۔ دانش اسکا مطلب سمجھ گیا۔۔ اور فوراََ ہی اپنی زبان نکال کر ندا یاسر کی چوت کو چاٹنے لگا۔۔ ندا کے منہ سے سسکاریاں پورے کمرے میں گونجنے لگیں ۔۔ دانش کی زبان ندا کی چوت پر جادو کر رہی تھی ۔۔ اور وہ بری طرح سے تڑپ رہی تھی ۔۔۔ دانش نواز کبھی اپنی زبان کو ندا یاسر کی چوت کے اندر تک ڈال دیتا ۔۔ اور کبھی اسکی چوت کے دانے کو اپنی زبان کی نوک سے چھیڑنے لگتا ۔۔۔ ایک بار جب دانش نے اسکی چوت کے دانے کو اپنے دانتوں میں لے کر دبایا تو لذت کے مارے ندا یاسر کی چیخ تو نکلی ہی نکلی ۔۔ ساتھ ہی اسکی چوت نے بھی پانی چھوڑ دیا ۔۔۔ اور ایکدم سے اسکا جسم جیسے نڈھال سا ہو گیا۔۔۔دانش مسکرا کر اسے دیکھنے لگا۔۔۔
    کچھ دیر کے بعد دانش نے ندایاسر کو اپنے لوڑے کی طرف کھینچا ۔۔ تو ندا یاسر اسکے لوڑے پر جھک گئی ۔۔ اسکے لوڑے کو اپنے نازک سے ہاتھ میں لے کر اسکے ٹوپے کو چوما ۔۔۔ اور اپنی زبان سے اسے چاٹنے لگی ۔۔ نیچے سے اوپر تک اس پر اپنی زبان پھیرتی ۔۔ اور پھر اسکے ٹوپے کو اپنے منہ میں لے لیتی ۔۔

    دانش نواز۔۔ بھابی جی ۔۔ پورا لو نا میرا لوڑا اپنے منہ میں ۔۔۔

    ندا یاسر اسکے لوڑے پر اپنا ہاتھ اوپر نیچے کرتی ہوئی بولی ۔۔ لیتی ہوں تھوڑا صبر تو کرو ۔۔ تم میں بھی بلکل صبر نہیں ہے تمھارے بھیا کی طرح ہی ۔۔۔

    دانش نواز ہنسا۔۔۔ تو کیا بھیا بھی ایسے ہی اپنا لنڈ چسواتے ہیں ۔۔

    ندا یاسر نے پیار سے اسے گھورا ۔۔۔ اور پھر اسکے ٹوپے پر اپنی زبان پھیرنے لگی ۔۔ دانش نواز اپنا ہاتھ بڑھا کر ندا یاسر کے مموں سے کھیل رہا تھا ۔۔۔
    دانش نواز۔۔ بھابی کیسا ہے میرا لوڑا ۔۔ پسند آیا کیا ۔۔

    ندا یاسر ۔۔۔ تم دونوں بھائیوں کا ایک جیسا ہی ہے ۔۔ تمھارا تھوڑا زیادہ موٹا ہے ۔۔ تم ہو بھی تو اس سے زیادہ موٹے نا ۔۔

    اب ندا یاسر نے دانش نواز کا لوڑا اپنے منہ میں لیا ۔۔ اور اسے اندر تک لینے لگی ۔۔ دانش نواز نے ندا یاسر کا سر اپنے ہاتھوں میں پکڑا اور نیچے کو کھینچنے لگا۔۔

    ندا یاسر نےاسکا لوڑا اپنے منہ سے نکالا اور بولی ۔۔ کوئی زبردستی نہیں کرنی سمجھے ۔۔ میں خود ہی لوں گی اپنے منہ میں اپنے حساب سے ۔۔۔

    دانش دانت نکالتے ہوئے بولا ۔۔ اوکے ۔۔ اوکے ۔۔ مائی ڈئیر بھابی ۔۔۔

    ندا یاسر مسکرائی ۔۔ اور پھر سے دانش نواز کا لوڑا اپنے منہ میں لے کر چوسنے لگی ۔۔۔ آہستہ آہستہ اسے اندر تک لے رہی تھی ۔۔۔ اپنے حلق میں اتارنے کی کوشش کر رہی تھی ۔۔ جیسے ہی دانش نواز کے لوڑے کی ٹوپی ندا یاسر کے حلق سے ٹکرائی تو ندا یاسر رک گئی ۔۔ اور پھر آہستہ آہستہ اسے اپنے حلق میں اتارنے لگی ۔۔۔ اپنے سر کو اوپر نیچے کرتے ہوئے ۔۔ نیچے اسکی چوت ایک بار پانی چھوڑنے کے باوجود بھی پھر سے گرم ہونے لگی تھی ۔۔ اب اسکا دل چاہ رہا تھا کہ اسکے دیور کا لوڑا اسکی چوت میں اتر جائے ۔۔ اور اسکی چوت کی پیاس بجھا دے ۔۔ کچھ دیر تک دانش نواز کا لوڑا چوسنے کے بعد ندا یاسر نے اپنے منہ سے اسکا لوڑا نکال دیا۔۔

    دانش نواز اب بستر پر سیدھا ہوا۔۔ ندا یاسر کو اسی کے بیڈ پر گھوڑی بنا دیا ۔۔۔ اور خود اسکے پیچھے آگیا۔۔۔ اپنی بھابی کی خوبصورت گانڈ کو دیکھا تو دانش نواز کے منہ میں پانی بھر آیا۔۔ اس نے اپنی بھابی ندا یاسر کی گانڈ کو سہلانا شروع کر دیا ۔۔ اس پر اپنا ہاتھ پھیرنے لگا۔۔ پھر اس نے ندا یاسر کے دونوں چوتڑوں کا کھولا ۔۔۔ تو اسکی گانڈ کا گلابی تنگ سوراخ اسکی نظروں کے سامنے تھا۔۔۔ بے اختیار ہی دانش نواز جھکا ۔۔ اور اپنے ہونٹ اپنی بھابی کی گانڈ کے سوراخ پر رکھ دئیے ۔۔ جیسے ہی دانش نواز کے ہونٹ اور زبان ندا یاسر کی گانڈ سے چھوئے تو ندا یاسر کے پورے جسم میں ایک لذت آمیز لہر دوڑ گئی ۔۔ اور اس نے بے اختیار ہو کر اپنی گانڈ کو پیچھے کو دھکیل دیا۔۔۔ اپنے دیور کے منہ پر ۔۔۔ دانش نواز نے ندا یاسر کی گانڈ کو سوراخ کو اپنی زبان سے چاٹنا شروع کیا ہوا تھا ۔۔ اسکے سُکڑے ہوئے سوراخ پر اپنی زبان کی نوک پھیر رہا تھا ۔۔ اور اپنی بھابی کو تڑپا رہا تھا ۔۔۔ کبھی اپنی زبان کو تھوڑا اور نیچے لے جاتے ہوئے ندا یاسر کی چوت کے سوراخ کے اندر ڈال دیتا۔۔

    ندا یاسر تڑپی ۔۔ پلیز۔۔۔۔ دانش ۔۔ میرے پیارے دیور جی ۔۔۔ پلیز اب اور نہیں تڑپاؤ۔۔۔

    دانش شیطانی ہنسی ہنستے ہوئے ۔۔ تو پھر اور کیا کروں بھابی جی ۔۔۔

    ندا یاسر سسکی ۔۔۔ چود دو نا پلیزاپنی بھابی کو ۔۔۔

    دانش نواز اپنی انگلی کو ندا یاسر کی چوت کے اندر باہر کرتے ہوئے بولا ۔۔۔ لیکن ابھی تھوڑی دیر پہلے ہی تو آپ اس چکنے پٹھان سے چدی ہو نا ۔۔ تو کیا پھر سے آپ کی اس پیاری سی گرم سی چوت میں آگ لگ گئی ہے ۔۔

    ندا یاسر اپنی کمر کو آگے پیچھے کرتی ہوئی ۔۔ دانش نواز کی انگلی پر اپنی چوت کو رگڑتی ہوئی سسکی ۔۔۔ ہاں ۔۔ تم نے ہی تو لگا ئی ہے یہ آگ۔۔۔ اب پلیز بجھا بھی تو دو نا ۔۔۔

    دانش نواز مسکرایا۔۔ اور پھر اپنے لوڑے کی ٹوپی کو ندا یاسر کی چوت کے پانی چھوڑتے ہوئے سوراخ پر ٹکا دیا۔۔ اور بنا اپنے لوڑے کو اندر کیے ہوئے چوت کے منہ کو سہلانے لگا۔۔ ندا یاسر کی حالت بری ہو رہی تھی ۔۔ اسکا تو جیسے پورے کا پورا جسم ہی کسی آگ میں سلگ رہا تھا ۔۔۔ اور یہ آگ اسکی چوت میں سے اسکے پورے جسم میں پھیل رہی تھی ۔۔۔ آخر دانش نواز کو اپنی بھابی پر ترس آہی گیا۔۔ اور اس نے آہستہ آہستہ اپنا لوڑا ندا یاسر کی چوت کے اندر سرکانا شروع کر دیا۔۔۔ ندا یاسر بھی اپنی چوت کو پیچھے کو لے جانے لگی ۔۔ اور دھیرے دھیرے دانش نواز کا پورا لوڑا ندا یاسر کی چوت میں اُتر گیا۔۔

    دانش نواز نے اب ندا یاسر کی پتلی گوری کمر کو اپنے دونوں ہاتھوں میں تھاما ۔۔ اور اپنی کمر کو ہلاتا ہوا دھکے مارنے لگا۔۔ اسکا لوڑا ندا یاسر کی چوت کے اندر باہر ہونے لگا۔۔ اپنے دیور کا لوڑا چوت کے اندر جاتے ہی ندا یاسر کو تو جیسے سکون سا مل گیا ہو ۔۔۔ اس نے اپنا سر نیچے اپنے سامنے رکھے ہوئے تکیہ پر رکھا ۔۔ اور اپنی گانڈ اور چوت کو اور بھی اوپر کو اٹھا دیا۔۔ تاکہ اسکے دیور کا لوڑا اور بھی گہرائی تک اسکی چوت کے اندر جا سکے ۔۔ اور ہو بھی تو ایسا ہی رہا تھا نا کہ دانش نواز کا لوڑا بہت اندر تک ندا یاسر کی چوت میں جا رہا تھا ۔۔ اور ندا کو اسکا لوڑا اپنی بچہ دانی کو چھوتا ہوا محسوس ہو رہا تھا ۔۔۔

    کچھ دیر تک دانش نواز ایسے ہی گھوڑی بنا کر اپنی بھابی کو چودتا رہا ۔۔ پھر اس نے اپنا لوڑا اسکی چوت کے اندر سے نکالا ۔۔ ندا یاسر کو سیدھا کر کے بیڈ پر لٹایا۔۔ اور اسکی دونوں ٹانگیں کھول کر خود درمیان میں آگیا۔۔ ندا یاسر کی چوت میں سے اسکا گاڑھا پانی رس رہا تھا ۔۔۔ دانش نواز نے اپنے لوڑے کو لمبائی میں ندا کی چوت کے اوپر پورا رکھا ۔۔ اور اسے آہستہ آہستہ آگے پیچھے کرنے لگا۔۔ اسکا لوڑا ندا یاسر کی چوت کے دونوں لبوں کے درمیان پورے کا پورا سرک رہا تھا ۔۔ ندا کی چوت میں سے بہنے والا پانی اسکے لوڑے کو چکنا کرتے ہوئے اسکی حرکت کو آسان بنا رہا تھا ۔۔۔ ندا کی چوت بالوں سے پاک تھی ۔۔ بس ہلکے ہلکے نوکدار سے بال محسوس ہو رہے تھے جو کہ نظر نہیں آتے تھے ۔۔ اور یہ نوکیلے بال دانش نواز کو اپنے لوڑے پر چبھتے ہوئے محسوس ہورہے تھے ۔۔۔ اور ان ہلکے ہلکے بالوں کی چبھن بھی دانش کو بہت مزہ دے رہی تھی ۔۔

    آخر دانش کی حرکتوں سے تنگ آکر ندا یاسر نے اپنا ہاتھ بڑھا کر دانش کا لوڑا پکڑا اور اپنی چوت کے سوراخ پر رکھ کر اپنے دونوں پیروں کو اسکی کمر پر رکھ کر اپنی طرف جھٹکا دیا۔۔ تو گھڑاپ کی آواز کے ساتھ ہی دانش کو لوڑا ندا یاسر کی چوت کے اندر اُتر گیا۔۔

    دانش نواز ہنسا۔۔ اُف میری بھابی تو بہت ہی بے چین ہو رہی ہیں اپنے دیور کے لوڑے کے لیے ۔۔

    ندا یاسر بولی ۔۔ بس اب اپنا منہ بند کر لو ۔۔۔ اور بس میری چوت کی آگ ٹھنڈی کر دو۔۔۔ یہ کہتے ہوئے ندا یاسر نے اپنے ہونٹ دانش نواز کے ہونٹوں پر رکھ دئیے ۔۔ اور اور اسکا منہ بند کر لیا۔۔۔ اور پیچھے سے اسکی کمر کو اپنی ٹانگوں کے ساتھ جکڑ کر اسے اپنے اوپر کھینچ لیا۔۔۔

    بھاری بھرکم جسم والا دانش نواز اب تقریباََ ندا یاسر کے نازک سے جسم پر لیٹا ہوا تھا ۔۔ اور اپنے لنڈ کو اسکی چوت کے اندر باہر کرتے ہوئے اسے چود رہا تھا ۔۔۔ دانش نواز کا لوڑا جڑ تک اسکی بھابی ندا یاسر کی چوت میں اُتر چکا ہوا تھا ۔۔ اتا موٹا لوڑا اپنی چوت کے اندر لینے کے بعد ندا یاسر کو اپنی چوت جیسے فُلی پیک ہو رہی ہوئی محسوس ہو رہی تھی ۔۔ ندا یاسر کی دونوں بانہیں اپنے دیور کے گلے میں تھیں ۔۔ اور وہ بھیا اسکو چومتے ہوئے ۔۔ سسکاریاں لیتی ہوئی ۔۔۔ اسکے لوڑے سے چدوا رہی تھی ۔۔۔ دانش نواز کے لوڑے کے طاقتور گھسوں سے ۔۔ اور لوڑے کی رگڑ سے ندا یاسر کی چوت نے جلد ہی ایک بار پھر سے پانی چھوڑ دیا۔۔۔ اور وہ نڈھال ہو کر اپنی آنکھیں بند کر کے لیٹ گئی ۔۔ دانش نواز ابھی بھی اسکو چود رہا تھا ۔۔۔

    ندا یاسر۔۔ پلیز دانش ۔۔ اب جلدی سے ختم کر دو ۔۔۔ میں تھک گئی ہوں ۔۔

    دانش اپنا لوڑا ندا یاسر کی چوت میں اندر باہر کرتے ہوئے بولا ۔۔ ارے بھابی ۔۔ ابھی تو آپ کو چودنے کا مزہ آنا شروع ہوا تھا ۔۔ اور آپ کی بس بھی ہو گئی ہے ۔۔۔

    ندا یاسر سسکی ۔۔ آج بس کرو ۔۔۔ آئندہ جیسے مرضی کر لینا ۔۔۔ تم سے پہلے اس چائے والے نے چود چود کر برا حال کر دیا ہے ۔۔ اور اب تم ۔۔۔ اُف ف ف ف ۔۔۔۔ پتہ نہیں کیا چیز ہو تم ۔۔ اور تمھارا یہ لوڑا ۔۔۔

    دانش نواز ہنسا۔۔۔ اور ایک اور زور کا جھٹکا ندا یاسر کی چوت میں مار دیا۔۔۔ ارے میری پیاری بھابی ۔۔۔ ابھی تو آپ کی گانڈ کا مزہ بھی لینا ہے ۔۔۔ ابھی تو آپ کی جان نہیں چھوڑنے والا۔۔۔

    ندا یاسر تڑپی ۔۔ نہ بابا نا ۔۔۔ آب کچھ اور نہیں ۔۔۔ پلیز۔۔ پیچھے سےنہیں کرنے دوں گی آج ۔۔ پھر کسی دن کر لینا پیچھے سے ۔۔

    دانش نواز ندا یاسر کی رونی صورت کو دیکھ کر ہنسنے لگا۔۔ اور اپنے لوڑے کو اسکی چوت میں اندر باہر کرنے لگا۔۔ ندا یاسر نے بھی اپنی چوت کو دباتے ہوئے اپنے دیور کے لوڑے کو نچوڑنا شروع کر دیا۔۔۔ تھوڑی ہی دیر گزری تو آخر دانش بھی ندا یاسر کی چوت کی گرمی کے آگے ہار گیا۔۔ اور اسکے لوڑے نے اپنا پانی ندا یاسر کی چوت کے اندر چھوڑنا شروع کر دیا۔۔ اور پھر دونوں دیور بھابی نڈھال ہو کر لیٹ گئے ۔۔

    Last edited by Story-Maker; 10-05-2018 at 11:50 PM.
    دیکھو دیکھو کون آیا۔۔۔۔۔۔۔۔ پنک بے بی آیا پنک بے بی آیا

  9. The Following 11 Users Say Thank You to pinkbaby For This Useful Post:

    abkhan_70 (10-05-2018), aloneboy86 (12-05-2018), hananehsan (11-05-2018), Irfan1397 (11-05-2018), Lovelymale (13-05-2018), panjabikhan (11-05-2018), piraro (11-05-2018), shubi (17-05-2018), Story-Maker (10-05-2018), suhail502 (11-05-2018), teno ki? (14-05-2018)

  10. #37
    Story-Maker's Avatar
    Story-Maker is offline Super Moderators
    Join Date
    Mar 2016
    Location
    Pakistan
    Age
    24
    Posts
    4,016
    Thanks
    1,817
    Thanked 4,931 Times in 2,460 Posts
    Time Online
    1 Week 6 Days 19 Hours 53 Minutes 27 Seconds
    Avg. Time Online
    25 Minutes 3 Seconds
    Rep Power
    864

    Default

    بہترین قسط ہے بھیا

  11. #38
    pajal20 is offline Premium Member
    Join Date
    Sep 2009
    Posts
    515
    Thanks
    277
    Thanked 1,619 Times in 440 Posts
    Time Online
    2 Days 23 Hours 15 Minutes 37 Seconds
    Avg. Time Online
    1 Minute 50 Seconds
    Rep Power
    547

    Default

    Aik aur mazay daar aur garam part denay ka bohat shukriya dost.


    Agar aap is story main GIF pics post karna chain to yeh link use kar lain.


    FreeImageHosting.net - Upload Image
    Mohabat Mujay Un Jawano Say Hai
    Apni Behan Kay Naray Pay Jo Dalaty Hain HATH.

  12. The Following User Says Thank You to pajal20 For This Useful Post:

    suhail502 (11-05-2018)

  13. #39
    piraro is offline Aam log
    Join Date
    Nov 2016
    Location
    Karachi
    Age
    33
    Posts
    24
    Thanks
    94
    Thanked 25 Times in 15 Posts
    Time Online
    2 Days 45 Minutes 19 Seconds
    Avg. Time Online
    5 Minutes 11 Seconds
    Rep Power
    5

    Default

    بہت اچھے جا رہے ہو دوست۔
    کہانی مذیدار ہے۔

  14. The Following 2 Users Say Thank You to piraro For This Useful Post:

    shubi (17-05-2018), suhail502 (11-05-2018)

  15. #40
    Irfan1397's Avatar
    Irfan1397 is offline super moderator
    Join Date
    Sep 2011
    Location
    Sahiwal
    Posts
    7,552
    Thanks
    26,261
    Thanked 38,368 Times in 7,339 Posts
    Time Online
    1 Month 2 Weeks 1 Day 2 Hours 37 Minutes 53 Seconds
    Avg. Time Online
    27 Minutes 53 Seconds
    Rep Power
    3131

    Default

    very very sexy update .

  16. The Following User Says Thank You to Irfan1397 For This Useful Post:

    suhail502 (11-05-2018)

Page 4 of 7 FirstFirst 1234567 LastLast

Bookmarks

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •