Page 2 of 16 FirstFirst 12345612 ... LastLast
Results 11 to 20 of 155

Thread: شباب حیات

  1. #11
    pakdragon's Avatar
    pakdragon is offline Aam log
    Join Date
    Aug 2015
    Age
    22
    Posts
    28
    Thanks
    0
    Thanked 12 Times in 11 Posts
    Time Online
    38 Minutes 34 Seconds
    Avg. Time Online
    2 Seconds
    Rep Power
    115

    Cool

    کر اس کی پھدی سے پانی نکالا اور سارا پی گیا ریحانہ کی زندگی کا پہلا موقع تھا اج کسی نے اس کی پھدی کا پانی پیا تھا وہ زور زور سے لن چوسنے لگی لیکن علی فارغ نہیں ہوا اخر تھک کر بولی علی اب اور برداشت نہیں ہوتا میری پھدی کو پھاڑ دو علی نے یہ سن خر ریحانہ کو لٹا کر اس کی ٹانگوں کے درمیان آ گیا اور لن کو اس کی پھدی پر رگڈنے لگا اس سے ریحانہ کی رہی سہی کسر بھی نکال گیئ اور وہ تڑپنے لگی وہ بار بار گانڈ اٹھا اٹھا کر لن لینے کے لیے ترسنے لگی
    اخر علی کو اس پر رحم آ گیا علی نے اپنے موٹے لن کو اس کی پھدی کے لبوں پر رکھا اس کی پھدی کے لب کپکہا رہے تھے علی موقع ضائع کیے بغیر اک دھکا لگایا علی کا لن پھسلتا ہوا ٹوپی تک اس کی پھدی میں پھنس گیا ریحانہ کی انکھیں درد کی شدت سے پھیل گئیں علی نے بنا وقت گنوائے اک دھکا لگایا علی کا لن اس کی پھدی کو چیرتا ہوا ادھا اندر داخل ہو گیا اس وقت ریحانہ کے منہ سے چیخوں کا طوفان نکل ایا اور وہ علی کو روکنے کے لیے منتیں کرنے لگی اس کے انسو اس کی آنکھوں سے بہتے ہوئے اس کے لال گالوں کو بھگو رہے تھے علی نے کچھ لمحے رکنے کے بعد پھر سے حرکت دینا چاہی مگر ریحانہ نے اس کو ہلنے نا دیا علی نے اس کے مموں کو منہ میں لے کر چوسنا شروع کیا اور اس طرح اس کو نارمل کرنے لگا علی نے کچھ دیر میں محسوس کیا کے ریحانہ کافی حد تک نارمل ہے تو علی نے اسی انداز میں پیٹھ کو تھوڑا سا ہلایا اور لن کو ٹوپی تک باہر نکالا علی کو اپنے لن کو باہر اتے ساتھ ہی کچھ گرم گرم پانی بھی باہر اتا محسوس ہوا علی نے جب نیچے دیکھا تو خون دیکھ علی اور جوش میں آ گیا علی نے ادھے لن کے ساتھ ہی ریحانہ کو چودنا شروع کیا اور ٹوپی تک لا کر ادھا لن اک آہستہ سے جھٹکے سے اندر ڈال دیتا اسی طرح چودتے علی نے محسوس کیا ریحانہ کافی حد تک نارمل ہو گئی ہے اور اس کے ساتھ ساتھ وہ اپنی گانڈ اٹھا اٹھا کر لن کو اور اندر لینے کی کوشش کرنے لگی مگر علی نے اپنا انداز وہی رکھا اس طرح کرنے کے کچھ منٹ میں ریحانہ کے جسم میں اچانک تھوڑی تیزی آ گئی اور علی کے گرد اس کے ہاتھوں کی پکڑ مضبوط ہونے لگی علی اسی وقت کا انتظار کر رہا تھا اچانک ریحانہ کے جسم نے اکڑنا شروع کیا اور اس کے ساتھ ہی وہ فارغ ہونے لگی اس بات کو محسوس کرتے ہی علی نے لن کو ٹوپی تک باہر نکالا اور اک زور دار جھٹکے میں پورا لن اس کی پھدی میں اتار دیا علی کو یوں محسوس ہوا جیسے کوئی کپڑا پھٹ گیا اور اس کے ساتھ ہی علی کا پورا لن ریحانہ کی پھدی میں اتر گیا اور ریحانہ اک زوردار چیخ مار کر بےہوش ہو گئی علی نے اس کے منہ پر کافی تھپڑ مارے مگر وہ دنیا سے بیگانہ ہو گئی تھی مگر بےہوشی کی حالت میں بھی ریحانہ کی انکھوں سے انسو جاری تھے اور اس کی ٹانگیں بری طرح کانپ رہی تھیں علی رکا نہیں اور اپنے جھٹکے اس کی ہھدی کی گہرای میں لگاتا رہا کچھ دیر بعد ریحانہ کو ہوش انھ لگا مگر وہ درد اور مزے کی ملی جلی حالت میں کچھ بولنے سے خود کو روک رھی تھی پورے کمرے میں تھپا تھپ اور مدھر اہ اہ اہ اہ اوئی ماں مار ڈلا نیکالو پلیز جیسیا آوازوں سے گونج رہا تھا اسی سب میں ریحانہ اک بار اور فارغ ہو گیئ لیکن علی کو محسوس ہوا کے ریحانہ کی بس ہو گیئ ہے علی نے ریحانہ کی پھدی سے لن نکالا اور صاف کر کے اس کو گھوڑی بنا خر اس کے پیچھے آ گیا اور ریحانہ کو پیچھے سے دھکے لگانے لگا پیچھے سے لن ڈالنے سے لن اور زیادہ پھنس کر جانےعلی نے ریحانہ کی بچہ دانی کو بھی چوٹ لگنے لگی ریحانہ پر اب اک عجیب سی غنودگی چھا رہی تھی اسی دوران ریحانہ تیسری بار فارغ ہو گئی گھوڑی سٹائل میں ریحانہ زیدہ دیر ٹک نھیں پائی اور پیٹ کے بل گر گئی اس دوران علی نے محسوس کیا اس کا لن اچانک اور لمبا اور موٹا ہو رہا ہے اورریحانہ کی حالت اور بگڑنے لگی اور چیخوں کا نا رکنے والا سلسلہ شروع ہو گیا مگر علی نے اپنے دھکوں میں کوئ کمی نا لائی اچانک علی نے اور زور سے دھکے مارنے شروع کر دیےعلی کا لن ریحانہ کی بچہ دانی کے منہ سے ٹکرا کر واپس آ رہا تھا اچانک علی نے خون اور ریحانہ کےپانی سے بھرا لن نیکال کر اس کے منہ میں دے دیا اور اس کے منہ کو چودنے لگا اس کے ساتھ ہی علی نے ریحانہ کے منہ میں پانی کی دھار چھوڑ دی اس دوران علی کی منی نے ریحانہ کے پورے جسم کو بھگو دیا اور اس کے ساتھ لیٹ گیا کچھ دیر بعد اس نے ریحانہ کو اٹھا کر پانی گرم کر کے اس کی پھدی کو پانی سے سینک کر اس کو کچھ ارام پہنچایا اور اٹھا کر واپس بیڈ پر لٹا دیا ریحانہ نے اک ادا سے اسے کس کیا
    Last edited by Story-Maker; 25-07-2017 at 12:44 AM.

  2. #12
    teno ki? is offline Premium Member
    Join Date
    Feb 2012
    Posts
    317
    Thanks
    389
    Thanked 536 Times in 231 Posts
    Time Online
    1 Week 3 Days 2 Hours 44 Minutes 6 Seconds
    Avg. Time Online
    6 Minutes 42 Seconds
    Rep Power
    39

    Default

    بھت خوب دوست
    تھوڑی سی تلفظ کی غلطی ھے مگر کھانی اچھی ھے
    اپڈیٹ کا انتظار رھے گا

  3. #13
    Lovelymale's Avatar
    Lovelymale is offline Premium Member
    Join Date
    Aug 2008
    Location
    Islamabad, Pakistan, Pakistan
    Age
    54
    Posts
    1,988
    Thanks
    14,214
    Thanked 6,991 Times in 1,793 Posts
    Time Online
    2 Weeks 2 Days 19 Hours 43 Minutes 41 Seconds
    Avg. Time Online
    10 Minutes 58 Seconds
    Rep Power
    1045

    Default

    Kahani achi lagi. Acha aghaaz hai. Yeh kahani kafi lambi chal sakti hai kyonkeh bari bari boht se teachers aur boht se students aur boht si relatives uss ke shandar loray ka shikaar ho skati hain.

  4. #14
    teno ki? is offline Premium Member
    Join Date
    Feb 2012
    Posts
    317
    Thanks
    389
    Thanked 536 Times in 231 Posts
    Time Online
    1 Week 3 Days 2 Hours 44 Minutes 6 Seconds
    Avg. Time Online
    6 Minutes 42 Seconds
    Rep Power
    39

    Default

    بھت بھت زبردست
    اپڈیٹ کی سپیڈ بھی ٹھیک ھے
    پلیز اس سٹوری کو ادھورا مت چھوڑنا
    اور اپڈیٹ بھی جلد دیتے رھنا
    شکریہ

  5. #15
    sameer04 is offline Banned
    Join Date
    Apr 2011
    Location
    Karachi
    Posts
    3,193
    Thanks
    28,546
    Thanked 27,604 Times in 3,061 Posts
    Time Online
    1 Week 1 Day 15 Hours 7 Minutes 21 Seconds
    Avg. Time Online
    5 Minutes 38 Seconds
    Rep Power
    0

    Default

    Quote Originally Posted by pakdragon View Post
    کر اس کی پھدی سے پانی نکالا اور سارا پی گیا ریحانہ کی زندگی کا پہلا موقع تھا اج کسی نے اس کی پھدی کا پانی پیا تھا وہ زور زور سے لن چوسنے لگی لیکن علی فارغ نہیں ہوا اخر تھک کر بولی علی اب اور برداشت نہیں ہوتا میری پھدی کو پھاڑ دو علی نے یہ سن خر ریحانہ کو لٹا کر اس کی ٹانگوں کے درمیان آ گیا اور لن کو اس کی پھدی پر رگڈنے لگا اس سے ریحانہ کی رہی سہی کسر بھی نکال گیئ اور وہ تڑپنے لگی وہ بار بار گانڈ اٹھا اٹھا کر لن لینے کے لیے ترسنے لگی
    اخر علی کو اس پر رحم آ گیا علی نے اپنے موٹے لن کو اس کی پھدی کے لبوں پر رکھا اس کی پھدی کے لب کپکہا رہے تھے علی موقع ضائع کیے بغیر اک دھکا لگایا علی کا لن پھسلتا ہوا ٹوپی تک اس کی پھدی میں پھنس گیا ریحانہ کی انکھیں درد کی شدت سے پھیل گئیں علی نے بنا وقت گنوائے اک دھکا لگایا علی کا لن اس کی پھدی کو چیرتا ہوا ادھا اندر داخل ہو گیا اس وقت ریحانہ کے منہ سے چیخوں کا طوفان نکل ایا اور وہ علی کو روکنے کے لیے منتیں کرنے لگی اس کے انسو اس کی آنکھوں سے بہتے ہوئے اس کے لال گالوں کو بھگو رہے تھے علی نے کچھ لمحے رکنے کے بعد پھر سے حرکت دینا چاہی مگر ریحانہ نے اس کو ہلنے نا دیا علی نے اس کے مموں کو منہ میں لے کر چوسنا شروع کیا اور اس طرح اس کو نارمل کرنے لگا علی نے کچھ دیر میں محسوس کیا کے ریحانہ کافی حد تک نارمل ہے تو علی نے اسی انداز میں پیٹھ کو تھوڑا سا ہلایا اور لن کو ٹوپی تک باہر نکالا علی کو اپنے لن کو باہر اتے ساتھ ہی کچھ گرم گرم پانی بھی باہر اتا محسوس ہوا علی نے جب نیچے دیکھا تو خون دیکھ علی اور جوش میں آ گیا علی نے ادھے لن کے ساتھ ہی ریحانہ کو چودنا شروع کیا اور ٹوپی تک لا کر ادھا لن اک آہستہ سے جھٹکے سے اندر ڈال دیتا اسی طرح چودتے علی نے محسوس کیا ریحانہ کافی حد تک نارمل ہو گئی ہے اور اس کے ساتھ ساتھ وہ اپنی گانڈ اٹھا اٹھا کر لن کو اور اندر لینے کی کوشش کرنے لگی مگر علی نے اپنا انداز وہی رکھا اس طرح کرنے کے کچھ منٹ میں ریحانہ کے جسم میں اچانک تھوڑی تیزی آ گئی اور علی کے گرد اس کے ہاتھوں کی پکڑ مضبوط ہونے لگی علی اسی وقت کا انتظار کر رہا تھا اچانک ریحانہ کے جسم نے اکڑنا شروع کیا اور اس کے ساتھ ہی وہ فارغ ہونے لگی اس بات کو محسوس کرتے ہی علی نے لن کو ٹوپی تک باہر نکالا اور اک زور دار جھٹکے میں پورا لن اس کی پھدی میں اتار دیا علی کو یوں محسوس ہوا جیسے کوئی کپڑا پھٹ گیا اور اس کے ساتھ ہی علی کا پورا لن ریحانہ کی پھدی میں اتر گیا اور ریحانہ اک زوردار چیخ مار کر بےہوش ہو گئی علی نے اس کے منہ پر کافی تھپڑ مارے مگر وہ دنیا سے بیگانہ ہو گئی تھی مگر بےہوشی کی حالت میں بھی ریحانہ کی انکھوں سے انسو جاری تھے اور اس کی ٹانگیں بری طرح کانپ رہی تھیں علی رکا نہیں اور اپنے جھٹکے اس کی ہھدی کی گہرای میں لگاتا رہا کچھ دیر بعد ریحانہ کو ہوش انھ لگا مگر وہ درد اور مزے کی ملی جلی حالت میں کچھ بولنے سے خود کو روک رھی تھی پورے کمرے میں تھپا تھپ اور مدھر اہ اہ اہ اہ اوئی ماں مار ڈلا نیکالو پلیز جیسیا آوازوں سے گونج رہا تھا اسی سب میں ریحانہ اک بار اور فارغ ہو گیئ لیکن علی کو محسوس ہوا کے ریحانہ کی بس ہو گیئ ہے علی نے ریحانہ کی پھدی سے لن نکالا اور صاف کر کے اس کو گھوڑی بنا خر اس کے پیچھے آ گیا اور ریحانہ کو پیچھے سے دھکے لگانے لگا پیچھے سے لن ڈالنے سے لن اور زیادہ پھنس کر جانےعلی نے ریحانہ کی بچہ دانی کو بھی چوٹ لگنے لگی ریحانہ پر اب اک عجیب سی غنودگی چھا رہی تھی اسی دوران ریحانہ تیسری بار فارغ ہو گئی گھوڑی سٹائل میں ریحانہ زیدہ دیر ٹک نھیں پائی اور پیٹ کے بل گر گئی اس دوران علی نے محسوس کیا اس کا لن اچانک اور لمبا اور موٹا ہو رہا ہے اورریحانہ کی حالت اور بگڑنے لگی اور چیخوں کا نا رکنے والا سلسلہ شروع ہو گیا مگر علی نے اپنے دھکوں میں کوئ کمی نا لائی اچانک علی نے اور زور سے دھکے مارنے شروع کر دیےعلی کا لن ریحانہ کی بچہ دانی کے منہ سے ٹکرا کر واپس آ رہا تھا اچانک علی نے خون اور ریحانہ کےپانی سے بھرا لن نیکال کر اس کے منہ میں دے دیا اور اس کے منہ کو چودنے لگا اس کے ساتھ ہی علی نے ریحانہ کے منہ میں پانی کی دھار چھوڑ دی اس دوران علی کی منی نے ریحانہ کے پورے جسم کو بھگو دیا اور اس کے ساتھ لیٹ گیا کچھ دیر بعد اس نے ریحانہ کو اٹھا کر پانی گرم کر کے اس کی پھدی کو پانی سے سینک کر اس کو کچھ ارام پہنچایا اور اٹھا کر واپس بیڈ پر لٹا دیا ریحانہ نے اک ادا سے اسے کس کیا
    bhai font size big rakha karo

  6. #16
    pakdragon's Avatar
    pakdragon is offline Aam log
    Join Date
    Aug 2015
    Age
    22
    Posts
    28
    Thanks
    0
    Thanked 12 Times in 11 Posts
    Time Online
    38 Minutes 34 Seconds
    Avg. Time Online
    2 Seconds
    Rep Power
    115

    Smile

    کچھ دیر بعد اس نے ریحانہ کو اٹھا کر پانی گرم کر کے اس کی پھدی کو پانی سے سینک کر اس کو کچھ ارام پہنچایا اور اٹھا کر واپس بیڈ پر لٹا دیا ریحانہ نے اک ادا سے اسے کس کیا اور بولی زندگی میں پہلی بار ایسے انسان سے چدوایا ہے جو سچ میں چودنا جانتا ہے کچھ دیر بعد علی کے لن نے پھر سختی پکڑنی شروع کر دی یہ دیکھ ریحانہ گھبرا گی
    علی بولا میڈم کیا خیال ہے اک شوٹ اور ہو جائے مگر ریحانہ کی پھدی کا پہلے ہی کچومر بناپڑا تھا وہ اس حالت میں نہیں تھی اس لیے اس نے علی کو روکنے کی کوشش کی کہ علی اب بس کرو میری پھدی میں درد ہےاگلی بار کریں گے مگر تب تک بہت دیر ہو گئی تھی علی کا لن جوان ہو کر پورے جوبن میں جھٹکے کھا رہا تھا ریحانہ کے نازک ہاتھوں کا لمس پا کر اس کا لن اور بھی وحشی لگ رہا تھا اس پر غضب یہ کہ اس پر ریحانہ کی پھدی کا گرم گرم خون لگا تھا علی نے ریحانہ کا کوئی بہانہ نا سنا اور لن کو سیدھا اس کے منہ میں دے دیا اور اتنی زور سے منہ میں دھکا مارا کے کن سیدھا ریحانہ کے حلق میں چلا گیا اور اس کی انکھیں ابل ایئںمگر علی کو اس کی کوئی پروہ نہیں تھی اس نے اس کے منہ میں زور دار دھکے مارنے جاری رکھے اور ریحانہ کی آنکھوں سے انسو بہتے رہے جب علی کو لگا کے اس کا لن پورا گیلا ہو گیا ہے تو اس نے پورا زور لگا کر پہلے پورا لن اس کے حلق میں اتارا اور پھر جھٹکے سے باہر کھینچ لیااس سے ریحانہ کو بہت درد ہوا مگر علی نہ روکا اس نے ریحانہ کر لٹا کر لن کو اس کی پھدی کے منہ پر رکھا اور اک ہی جھٹکے میں پورا لن اس کی نازک پھدی میں ڈال دیااور ریحانہ کے منہ سے اک زوردار چیخ نکلی اور وہ بن آب کے مچھلی کی طرح تڑپنے لگی اسے یوں محسوس ہوا جیسے لوہے کا موٹا راڈ کسی نے اچانک اس کی پھدی میں دے دیا ہو علی اک پل کو رکا ریحانہ اس کو پیچھے ہٹانے کی نا کام کوشش کرنے لگی مگر علی نا روکا اس نے ریحانہ کی پھدی میں اپنا لن پورا ڈالا ہوا تھا اور زوردار دھکوں نے بیڈ کی چیخیں بھی نکلوا دی تھی علی کے ہر جھٹکے کے ساتھ ریحانہ کے منہ سے اہ ہ ہ ہ ہ نکلتی تو بیڈ بھی چررررر کی اواز نکلتی اس دوران ریحانہ کا درد کم ہو کر مزے میں بدلنے لگا اور اس نے اب گانڈ اٹھا اٹھا کر اس کا ساتھ دینا شروع کر دیا کچھ جھٹکوں کے ساتھ دیتے ہوئے ریحانہ کی پھدی ہار گئی اور ریحانہ نے پانی چھوڑ دیا علی کو یوں محسوس ہوا اس کی پھدی میں پانی کا سیلاب آ گیا ہے
    علی نے اس سب کے ساتھ ہی اپنا لن باہر نکالا اور لن کو دیکھا لن پوری طرح ریحانہ کی پھدی کے پانی سے لت پت تھا علی نے ریحانہ کو اچھانک سے مسکرا کر دیکھا اور ساتھ ہی اس کو گھوڑی بننے کو بولا اس دوران ریحانہ بھی سنبھل چکی تھی اس نے خود کو گھوڑی بنایا علی نے پیچھے آ کر لن کو اس کی پھدی پر رگڑا اور سختی سے ریحانہ کو پکڑ لیا اور ساتھ میں بولا تھوڈا سا درد ہوگا برداشت کرنا ریحانہ کو کچھ سمجھ نا ایا علی کا مطلب علی نے اپنے اک ہاتھ سے ریحانہ کے بالوں کو پکڑااور دوسرے ہاتھ سےاس کے کندھے کو پکڑا اور لن کا رخ پھدی کے سوراخ سے ہٹا کر ریحانہ کی گانڈ کا کر دیا ریحانہ پھر بھی نا سمجھی علی نے کچھ سوچ کر لن پھر سے اس کی پھدی میں ڈال دیا اور ساتھ میں اپنی انگلی کو ریحانہ کی گانڈ میں ڈال دیا ریحانہ تھوڑا سا ہلی مگر زیادہ نھی رکی اس کے ساتھ ہی علی نے دو انگلیاں ڈال دی اس کے ساتھ ہی علی نے انگلیاں اندر باہر کنا شروع کر دی علی نے جب محسوس کیا ریحانہ فارغ ہونے والی ہے تو علی نے لن باہر نکالا اور اس کی کنواری گانڈ میں رکھتے ساتھ ہی اک زور کا دھکا مارا اور اس کے موٹے لن کی ٹوپی اس کی گلابی گانڈ کو روندتی ہوئی اندر داخل ہو گئی ریحانہ کو درد تو ہوا لیکن اتنا خاس نہیں جتنا ہونا تھا علی روکا اور ریحانہ اس کو گالیں دینے لگی کتے باہر نکال اسے ہرامخور زلیل انسان اپنی اوقات بھول گیا کیا علی کو اخری بات بہت بری لگی اس کی اوقات والی بات نے علی کو اور غصہ دلا دیا علی نے غصے میں کہا ہرامزادی تو مجھے گالی دیتی ہے رک تیرا وہ ہال کرو گا کہ تو درد سے بلبلا اٹھے اور تیرا چلنا بھی مشکل کر دو گا اس کے ساتھ ہی اس نے اک زوردار دھکا مارا لن اس کی گانڈ پھاڑ کر اس کی گانڈمیں رستہ بنانے لگا اس درد کو وہ برداشت نا کر سکی اور بے ہوش ہو گئی علی نے اگلا جھٹکا مارا اور پورا لن اند ڈال دیا ریحانہ بیہوشی میں بھی چلا رہی تھی علی پر ا س کا کوئی اثر نا ہوا اور وہ اپنی دھن میں لگا رہا اور جھٹکوں سے ریحانہ کی گانڈ پھاڑنے میں لگا رہا 55 منٹس لگاتار سیکس کرتا رہا بیچ بیچ اسے ہوش اتا اور وہ درد کی وجہ سے پھر بیہوش ہو جاتی 55 منٹ کی زبردست چدائی کے بعد علی اس کی گانڈ میں فارغ ہو گیا اور اس کے اوپر لیٹ کر سانس بحال کرنے لگا ریحانہ کو ہلکا ہلکا ہوش آ گیا کچ دیر ایسے ہی گزرنے کے بعد علی نےباتھ لیا اور ریحانہ کو کس کر کے جانے لگا تو ریحانہ
    Last edited by Story-Maker; 25-07-2017 at 12:47 AM.

  7. #17
    ehaq14 is offline Premium Member
    Join Date
    Apr 2016
    Age
    19
    Posts
    62
    Thanks
    55
    Thanked 78 Times in 45 Posts
    Time Online
    1 Day 19 Hours 23 Minutes 56 Seconds
    Avg. Time Online
    3 Minutes 57 Seconds
    Rep Power
    20

    Default

    کہانی تو بہت اچھی ہے۔
    Thanks کا بٹن نظر نہیں آ رہا۔

  8. #18
    teno ki? is offline Premium Member
    Join Date
    Feb 2012
    Posts
    317
    Thanks
    389
    Thanked 536 Times in 231 Posts
    Time Online
    1 Week 3 Days 2 Hours 44 Minutes 6 Seconds
    Avg. Time Online
    6 Minutes 42 Seconds
    Rep Power
    39

    Default

    بھت زبردست اپڈیٹ دوست
    ویسے کھتے ھیں جوش کے ساتھ ھوش بھی رھے تو مزہ دوبالا ھو جاتا ھے
    بھرحال بھت بھت شکریہ
    جلدی جلدی اپڈیٹ دینے کا
    مزید کا انتظار رھے گا

  9. #19
    teno ki? is offline Premium Member
    Join Date
    Feb 2012
    Posts
    317
    Thanks
    389
    Thanked 536 Times in 231 Posts
    Time Online
    1 Week 3 Days 2 Hours 44 Minutes 6 Seconds
    Avg. Time Online
    6 Minutes 42 Seconds
    Rep Power
    39

    Default

    Quote Originally Posted by ehaq14 View Post
    کہانی تو بہت اچھی ہے۔
    Thanks کا بٹن نظر نہیں آ رہا۔
    ھاں یار میں نے بھی ڈھونڈھا تھینکس کا بٹن
    کوئ بتائے گا اس کے بارے میں

  10. #20
    muzaffar7633 is offline Premium Member
    Join Date
    Jun 2009
    Posts
    94
    Thanks
    3
    Thanked 92 Times in 59 Posts
    Time Online
    1 Week 2 Days 13 Hours 4 Minutes 31 Seconds
    Avg. Time Online
    6 Minutes 13 Seconds
    Rep Power
    19

    Default

    superb outstanding mind blowing lets rock keep it up
    Please jaldi update dena

Page 2 of 16 FirstFirst 12345612 ... LastLast

Bookmarks

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •