Page 5 of 7 FirstFirst 1234567 LastLast
Results 41 to 50 of 66

Thread: بھائی بہن کا انوکھا پیار

  1. #41
    Gulabkhan199 is offline Aam log
    Join Date
    Jul 2018
    Age
    26
    Posts
    2
    Thanks
    0
    Thanked 0 Times in 0 Posts
    Time Online
    8 Hours 26 Minutes 2 Seconds
    Avg. Time Online
    1 Hour 20 Minutes 39 Seconds
    Rep Power
    0

    Default

    Zabardast story he.Iss we pahlay ke parts kaisay padh saktay hain.I m new.

  2. #42
    Gulabkhan199 is offline Aam log
    Join Date
    Jul 2018
    Age
    26
    Posts
    2
    Thanks
    0
    Thanked 0 Times in 0 Posts
    Time Online
    8 Hours 26 Minutes 2 Seconds
    Avg. Time Online
    1 Hour 20 Minutes 39 Seconds
    Rep Power
    0

    Default

    Bah treen. Next update kab go go.

  3. #43
    javaidbond is offline Aam log
    Join Date
    Dec 2014
    Age
    31
    Posts
    40
    Thanks
    1
    Thanked 144 Times in 31 Posts
    Time Online
    13 Hours 35 Minutes 45 Seconds
    Avg. Time Online
    37 Seconds
    Rep Power
    9

    Default


    میں اور ناظم روبی آپی کے مموں کے خیالات میں ہی گم تھے اور آج جو کچھ بھی ہوا اس پر بہت خوش تھے۔ہم دونوں نے ہی آج تک کبھی کوئی ننگی لڑکی اپنے سامنے نہیں دیکھی تھی۔اب آج اگر اوریجنل ممے دیکھے بھی تھے تو اپنی ہی سگی بہن کے۔مجھے یہ سوچ پاگل کیے جا رہی تھی کہ اب میں روز آپی کے ممے دیکھ سکوں گا۔کیا ہوا کہ اگر آپی نے صرف قمیض ہی اتاری ہے۔ہو سکتا ہے آگے کبھی آپی پوری ننگی ہونے پر بھی آمادہ ہو جائے۔ناظم کی آواز پر میرا تسلسل ٹوٹا وہ کہہ رہا تھا کہ بھائی آپ کا کیا خیال ہے آپی اس بات کیلئے تیار ہو جائیں گی کہ وہ فل ننگی ہو کر دکھائیں۔میں نے ناظم کے اس سوال پر صرف مسکرانے پر ہی اکتفاء کیا اور سوچنے لگا کہ ہم دونوں کی سوچ ایک ہی ڈگر پر چل رہی ہے۔بھائی کتنا مزہ آئے گا نا اگر آپی فل ننگی ہو جائیں ناظم چھت کو تکتے ہوئے بولا تو میں نے کہا یار میں اس پر پلان کر رہا ہوں تم بس اس پر عمل کرو جو میں کہتا جاؤں اور جو میں کرتا جاؤں اس کو ہونے دینا۔میں نہیں چاہتا کہ ہماری کسی بھی حرکت پر آپی ناراض ہو جائیں۔اس لیے تھوڑی تھوڑی ڈوز دیا کریں گے۔اب تم سو جاؤ اور مجھے بھی سونے دو۔اور آنکھیں بند کر کے سوچنے لگا کہ اب آگے کیا کرنا چاہیے یہ سوچتے سوچتے نجانے نیند نے کب آن دبوچا۔۔۔۔۔اگلے دن میں کالج سے جلدی نکلا اور آتے ہوئے اپنے دوست سے تین عدد نئی سی ڈیز لے آیا۔میں چاہتا تھا کہ جب آج روبی آپی ہمارے کمرے میں آئیں تو پہلے سے ہی گرم ہوں۔جب میں گھر پہنچا تو دو بج رہے تھے۔امی ،روبی آہی،ناظم بیٹھے کھانا کھا رہے تھے میں نے بھی بیگ رکھا ہاتھ منہ دھویا اور کھانے میں شامل ہو گیا۔کھانے کے بعد امی اٹھیں اور سونے کےلئے اپنے کمرے میں چلی گئیں۔میں نے بیٹھے بیٹھے ٹی وی کے چینل بدلنے شروع کر دیے پھر ایک چینل پر کسنگ سین دیکھ کر ہاتھ روک دیا۔تو آپی بولیں،،ساگر،،کیا تم پاگل ہو گئے ہو امی کسی بھی ٹائم باہر آ سکتی ہیں۔ تو ناظم بولا کچھ نہیں ہوتا آپی جیسے ہی امی کے دروازے کے لاک کی آواز آئے گی بھائی چینل بدل دیں گے۔تبھی میں ہوسناک لہجے میں بولا،،میری سوہنی سی سیکسی آپی،،کیا خیال ہے آج دن کی روشنی میں ہی اپنے مموں کا دیدار کروا دو یار۔آپی ڈرتے ہوئے لہجے میں بولیں پاگل مت بنو۔۔اوپر کمرے میں چلتے ہیں تو میں نے کہا کہ ممے تو یہیں دیکھوں گا کیونکہ ڈر کے ساتھ یہ سب کرنے میں ایک اور ہی لذت ہے۔اور ساتھ ہی اپنا لن باہر نکال لیا اور ناظم کو بولا کہ میں امی کے کمرے کی طرف دھیان کرتا ہوں تم باہر گیٹ کی طرف دھیان رکھو مباداً کوئی آ ہی جائے۔میرا لن دیکھ کر آپی کی آنکھوں میں چمک آ گئی اور انہوں نے ڈرتے ڈرتے اپنی قمیض کو چادر سمیت اپنی گردن تک اٹھا دیا۔واؤ آپی نے بلیک کلر کی برا پہنی ہوئی تھی۔برا کے اندر سے مموں کے اوپر والے حصے قیامت ڈھا رہے تھے۔کچھ دیر اس منظر کو اپنی آنکھوں میں سمانے کے بعد میں نے کہا آپی برا بھی اٹھاؤ نا۔انہوں نے ڈرتے ہوئے ایک دفعہ امی کے کمرے کی طرف اور ایک دفعہ باہر گیٹ کی طرف نظر ڈالی اور برا اٹھا دی۔مجھ پر وہی کیفیت طاری ہو گئی جو پہلے آپی کے ممے دیکھ کر طاری ہوئی تھی میں ٹرانس کی کیفیت میں آگے بڑھنے ہی لگا تھا کہ آپی نے اپنی برا اور قمیض نیچے کر دی۔میں نے پوچھا کہ آپی اس ڈر میں یہ کام کرنے کا مزہ آیا کہ نہیں۔تو وہ دانت پیستے ہوئے بولیں مزے کے بچے کبھی کبھی تم حد سے باہر جانے لگتے ہو اگر ابھی امی باہر آ جاتیں تو تمہیں پتہ چلتا کہ اصل مزہ کیا ہوتا ہے۔میں نے بھی اپنا لن پینٹ میں ڈالتے ہوئے کہا آپی سچ سچ بتاؤ نا مزہ آیا کہ نہیں تو وہ مسکراتے ہوئے اپنے کمرے کی طرف چل دیں اور کمرے کے اندر جا کر مڑیں اور میری طرف منہ کر کے شرارتی انداز میں مسکرانے لگیں اپنی چادر اتاری اور آنکھ مار کر بولیں جھکاس۔۔۔۔اور ساتھ ہی اپنی قمیض پکڑ کر ایک جھٹکے سے اتار دی ہم دونوں کا منہ کھلا رہ گیا اس سے پہلے کے میں آگے بڑھتا آپی نے منہ چڑاتے ہوئے کمرے کا دروازہ بند کر دیا۔اور میں یہ سوچنے لگا کہ ہماری بہن کا یہ سٹائل بھی نرالا ہے کہ وہ اکثر جاتے جاتے پلٹ کر ہمیں مطمئن کر جاتی ہیں۔۔۔۔۔۔آج رات پھر آپی ہمارے کمرے میں آئیں اور آتے ہی اپنی قمیض اتار دی انہوں نے برا بھی نہیں پہنی ہوئی تھی۔ہم بھائیوں نے ایک مووی لگائی اور کبھی مووی دیکھتے کبھی آپی کو دیکھتے ہوئے ایک دوسرے کو چودا۔اب روزانہ رات یہی ہونے لگا۔کچھ دن بعد ایک رات جب ننگی آپی کے سامنے میں ناظم کو چود کر فارغ ہوا تو اس وقت تک آپی بھی ڈسچارج ہو چکی تھیں۔ہم تینوں اپنے کپڑے پہننے لگے تو آپی بولیں ساگر اب کچھ خاص مزہ نہیں آ رہا میں روز ایک ہی کام دیکھ دیکھ کر بور ہو رہی ہوں کچھ تو چینج لاؤ تا کہ مزہ آئے۔توناظم بولا مثلاً کس قسم کا چینج لائیں۔مجھے نہیں پتہ بس کچھ مزیدار سا ہو۔میں نے کہا آپی جان ہم جو کر سکتے ہیں وہی کر رہے ہیں ہمارے پاس تو کچھ نیا ہے نہیں دکھانے کو۔اگر کچھ چینج چاہتی ہیں تو آپ ہی کچھ نیا دکھا دو ہمیں۔آپی مسکرا کر اٹھیں اور اپنی چادر لپیٹتے ہوئے بولیں ساگر تیری تو میں ایک ایک رگ سے واقف ہو گئی ہوں چوتیے ابھی تیری شکل دیکھ کر ہی مجھے پتہ چل جاتا ہے کہ دماغ میں کیا چل رہا ہے اس سے آگے کچھ سوچنا بھی مت میں پہلے ہی کبھی کبھی جو کچھ ہو چکا ہے اس پر بہت گلٹی فیل کرتی ہوں۔اور آپی کا دکھی ہوتا چہرہ دیکھ کر میں بولا آپی بس اب رونا دھونا مت۔ہم دیکھ نہیں سکتے لیکن رات کو سونے سے پہلے سوچ تو سکتے ہیں نا۔ابھی اگر آپ رونے لگو گی تو ہم رات کو سوچ بھی نہیں پائیں گے تو آپی کھلکھلا کر ہنس پڑیں۔ساگر تم واقعی بہت بڑے کمینے ہو۔اور ہمیں شب بخیر کہہ کر کمرے سے نکل گئیں۔میں نے اپنے دوست نعیم جس سے سی ڈیز لاتا تھا اس کو یہ بتایا تھا کہ میں نے کوئی لڑکا سیٹ کیا ہوا ہے اور اس کے ساتھ سیکس کرتا ہوں اس لیے سی ڈیز لے جاتا ہوں۔اگلے دن میں اس کے پاس چلا گیا اور بولا یار ہم لوگ ایک ہی روٹین سے تنگ آ چکے ہیں تو کوئی اور ترکیب بتاؤ۔۔۔تو وہ بولا یار مجھے بھی ساتھ شامل کر لو ہم تینوں مل کر تھری سم سیکس انجوائے کریں گے۔نہیں یار وہ لڑکا بہت کئیر فل ہے کسی اور کیلئے نہیں مانے گا تو اس نے کچھ سوچتے ہوئے کہا کہ شام کو آنا میں کچھ کرتا ہوں۔شام کو میں پھر اس کے گھر چلا گیا۔تو اس نے مجھے ایک شاپر لا کر دیا اور بولا اس میں ایسی چیز ہے کہ تم لوگ مجھے یاد کرو گے۔میں نے شاپر میں جھانکا تو اس میں ایک ڈلڈو یعنی کہ پلاسٹک کا لن رکھا ہوا تھا۔میری آنکھیں پھٹی کی پھٹی رہ گئیں۔اور بے ساختہ میرے منہ سے نکلا،،اوئے بہن چود،،یہ تجھے کہاں سے ملا۔وہ کہنے لگا تو آم کھا گٹھلیوں کے پیچھے مت جا۔یار بھائی نہیں میرا بتا نا پلیز تم یہ کہاں سے لائے ہو۔نعیم نے جواب دیتے ہوئے کہا کہ تم میرے کزن سلیم کو تو جانتے ہو نا وہ اٹلی سے لایا تھا تین عدد ڈلڈو اور یہ سب سے چھوٹا اور پتلا ہے۔جب اس سے بیزار ہو جاؤ تو بتانا اس سے بھی بڑا دے دوں گا۔جا کاکے عیش کر عیش۔اور میں گھر کی طرف چل پڑا۔گھر جا کر میں نے چپکے سے ناظم کو وہ لن دکھایا تو ناظم بڑا حیران اور خوش ہوا۔ابھی ہم بے چینی سے رات کا انتظار کر رہے تھے۔رات کو اپنی روٹین کے مطابق آپی کمرے میں آئیں اور اپنی بڑی سی چادر اسکارف اور قمیض اتار کر صوفے کے ساتھ پڑے ٹیبل پر رکھی اور اپنی دونوں ٹانگیں کھول کر بیٹھ گئیں۔میں اور ناظم دونوں ہی آپی کے سامنے کھڑے ان کے چہرے پر نظر جمائے مسکراتے جا رہے تھے۔آپی نے حیرانی سے مجھے دیکھا اور بولیں کیا بات ہے تم دونوں یہاں کھڑے دانت کیوں نکال رہے ہو۔میرے کچھ کہنے سے پہلے ہی ناظم بول پڑا کہ آپی آج ہمارے پاس آپ کیلئے ایک سرپرائز ہے۔۔۔ناظم کی بات ختم ہونے سے پہلے ہی میں بول پڑا کہ آپی آپ چاہتی تھیں نا کہ کچھ الگ سا ہو جو ایکسائٹمنٹ پیدا کرے ہمارے کھیل میں۔ہاں تو آپی کچھ نا سمجھنے والے انداز میں بولیں تو میں اپنی الماری کی طرف گیا اور وہاں سے شاپر نکالا اور اس میں سے ڈلڈو نکال کر آپی کی طرف اچھال دیا جو کہ سیدھا جا کر آپی کی ٹانگوں کے درمیان میں سے ان کی پھدی پر لگا۔پھر آپی کی طرف دیکھا تو ان کا منہ کھلے کا کھلا رہ گیا تھا اور ان کی نظریں اس سترہ انچ لمبے اور ڈبل سائیڈ ڈلڈو پر چپک سی گئیں تھیں۔چونکہ آپی بھی ہماری ساری موویز دیکھ چکی تھیں تو وہ بھی اس ڈلڈو کے استعمال سے اچھی طرح واقف تھیں۔ہم دونوں آپی کے خوبصورت چہرے کے بدلتے رنگ دیکھتے رہے پھر آپی نے پھنسی پھنسی آواز میں پوچھا۔۔۔یہ۔۔۔۔یہ کہاں سے آیا تمہارے پاس کیونکہ میں نہیں سمجھتی کہ اس طرح کی چیزیں ہمارے ملک میں ملتی ہوں گی۔تو میں نے مسکراتے ہوئے جواب دیا۔آپی ہمارا ملک اب بہت ایڈوانس ہو چکا ہے آپ تصور بھی نہیں کر سکتیں کہ یہاں پر کیا کیا ہو رہا ہے۔آپی نے کھوئے کھوئے سے انداز میں ڈلڈو اپنے بائیں ہاتھ سے اٹھایا اور دایاں ہاتھ اوپر سے نیچے اور نیچے سے اوپر ڈلڈو کی پوری لمبائی پر پھیرنے لگیں۔پھر آپی نے بائیں ہاتھ سے ہی ڈلڈو کو درمیان سے تھام لیا اور دائیں ہاتھ کو ایسے اوپر سے نیچے پھیرنے لگیں جیسے مٹھ مارتے ہیں اور مسکراتے ہوئے ہماری طرف دیکھ کے کہنے لگیں۔تو یہ طریقہ ہے تم لوگوں کے مزہ لینے کا۔ایسے ہی تم لوگ مٹھ مارتے ہو نا۔جی یہی طریقہ ہے لیکن اگر آپ چاہیں تو ڈلڈو کو چھوڑیں پریکٹس کیلئے اوریجنل چیز حاضر ہے میں نے اپنے لن کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا۔جی نہیں مجھے کوئی ضرورت نہیں پریکٹس کرنے کی،،شکریہ جناب کا،،آپی نے نخریلے انداز میں کہا اور ڈلڈو کو میری جانب پھینک دیا۔پھر آپی نے اپنے بائیں ہاتھ سے اپنے ممے کے نپلز کو دو انگلیوں میں پکڑا اور مسلتے ہوئے اپنی ٹانگیں تھوڑی کھولیں اور دایاں ہاتھ اپنی پھدی پر رکھ کر رگڑتے ہوئے بولیں۔۔۔چلو اب جلدی سے شروع کرو مجھ سے مزید صبر نہیں ہو رہا ہے۔میں نے ڈلڈو کو اپنے ہاتھ میں پکڑا اور اپنی جگہ سے حرکت کیے بنا بولا کہ آپی آج کا شو ذرا سپیشل ہے تو اس کی ٹکٹ بھی تھوڑی سپیشل ہونی چاہیئے۔۔۔اب کیا تکلیف ہے تو میں نے ہاتھ کے اشارے سے صوفے کے پاس پڑے ٹیبل پر موجود آپی کے کپڑوں کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ آپی میرا خیال ہے اس ٹیبل پر ایک اور چیز کا اضافہ کر ہی دو آپ۔۔بکواس مت کر میں جو کر چکی ہوں وہ ہی بہت ہے۔۔اور جو تم کہہ رہے ہو وہ میں کبھی نہیں کروں گی۔۔۔اب جلدی کرو میں بہت زیادہ پرجوش ہوں تم لوگوں کو ڈلڈو کے ساتھ ایکشن میں دیکھنے کیلئے۔۔۔وہ جھنجھلاہٹ ذدہ لہجے میں بولیں۔۔۔میں نے کہا آپی آپ بھی تو خواہ مخواہ ضد پر اڑیں ہوئی ہیں۔آدھا ننگا جسم تو ہم آپکا دیکھ ہی چکے ہیں باقی آپ کو شلوار اتارنے میں کیا جھجھک ہے۔۔ویسے بھی ہم لوگ صرف دیکھنے کی بات کر رہے ہیں آپ کو چدائی میں شامل ہونے کیلئے تھوڑی نا کہہ رہے ہیں۔اچھا یہ بات ہے تو دفعہ ہو جاؤ تم لوگ مجھے نہیں دیکھنا شو۔۔اور اپنی قمیض پہننے لگیں۔۔ہم لوگ چپ چاپ کھڑے آپی کو گھورتے رہے۔قمیض پہن کر آپی نے سر پر اسکارف باندھا۔چادر لپیٹی اور اٹھ کر دروازے کیطرف چل پڑیں۔تو میں نے کہا آپی جان اگر ذہن بدل جائے تو ہمارے کمرے کا دروازہ ہمیشہ آپ کیلئے کھلا ہے۔بلا جھجھک آ جانا ہم آپ کو اس شاندار چیز کے ساتھ یہیں ملیں گے۔آپی نے مڑ کر مجھے غصے سے دیکھا اور کچھ کہے بنا دروازے سے نکل گئیں۔۔۔آپی کے جاتے ہی ناظم فکرمندی اور مایوسی سے بولا بھائی جان یہ تو آپ کا پلان بیک فائر ہو گیا۔مطلب پوری کے چکر میں آدھی سے بھی ہاتھ دھو بیٹھے۔کم از کم آپی کے خوبصورت ممے تو ہمارے سامنے ہوتے تھے۔مگر اب سب ختم ہو گیا۔۔۔فکر نا کر یار۔۔۔۔ہم سے زیادہ مزہ آپی کو آتا ہے یہ سب دیکھنے میں۔میں تمہیں یقین دلاتا ہوں وہ واپس ضرور آئیں گی وہ اس کی بنا نہیں رہ سکیں گی۔لیکن میرا اندازہ غلط نکلا اس رات آپی واپس نہیں آئیں۔صبح ناشتے کے وقت بھی آپی بہت خراب موڈ میں تھیں اور ہماری طرف آنکھ اٹھا کر بھی نہیں دیکھا۔لیکن مجھے اپنی بہن کا یہ روپ بھی بھا گیا ان کے گلابی گال غصے کی حدت سے چمک رہے تھے اور وہ پہلے سے زیادہ خوبصورت لگ رہی تھیں۔تین دن تک آپی کا غصہ ویسا ہی رہا اور ہم لوگوں نے بھی انہیں نہیں چھیڑا۔۔۔چوتھی رات وہ ہمارے کمرے میں داخل ہوئیں اور مجھ سے نظر ملنے پر دروازے میں ہی کھڑے ہو کر پوچھنے لگیں۔۔۔۔۔۔ساگر تمہارا دماغ واپس ٹھکانے پر آیا کہ ابھی بھی تم وہی چاہتے ہو جو اس دن تمہاری ضد تھی۔تو میں نے جواب دیا آپی ہم آج بھی وہی کہیں گے کل بھی وہ کہیں گے جو اس رات کہہ رہے تھے۔۔۔۔آپی نے گھوم کر ایک نظر دروازے سے باہر سیڑھیوں کی طرف دیکھا پھر اندر آ کر اپنی چادر اور قمیض کا دامن پکڑ کر اپنی قمیض گردن تک اٹھا دی اور ممے ننگے کر دیے اور کہنے لگیں ایک بار پھر سوچ لو دیکھنا کہیں یہ بھی ہاتھ سے نکل جائیں۔میرا دماغ پھر سے سلگنے لگا لیکن میں نے خود کو قابو میں رکھا۔۔۔ادھر ناظم نے بھی فوراً میری طرف دیکھا جیسے کہہ رہا ہو بھائی پلیز مان جاؤ نا یار۔لیکن میں نے اپنے دماغ کو کنٹرول میں رکھتے ہوئے ناظم کو خاموش ہی رہنے کا اشارہ کرتے ہوئے آپی سے کہا۔۔۔آپی جان ہمارا فیصلہ اٹل ہے۔تو آپی نے یہ کہتے ہوئے کہ اوکے جو تمہاری مرضی اپنی قمیض نیچے کی اور چادر درست کر کے باہر نکل گئیں۔آپی کے جانے کے بعد ہم لوگ ویسے ہی اداس بیٹھے تھے اور ناظم تو اداس سا منہ بنا کر سونے کیلئے لیٹ گیا اور میں بھی اداسی سے سوچنے لگا کہ لگتا ہے اب آپی نہیں آئیں گی۔اور شاید یہ سلسلہ اسی طرح ختم ہونا تھا سو ہو چکا۔میں ان ہی سوچوں میں گم تھا کہ قریباً چالیس منٹ بعد کمرے کا دروازہ کھول کر آپی اندر داخل ہوئیں۔انہوں نے اندر آ کر دروازہ لاک کر دیا اور جھنجھلاتے ہوئے بولیں تم دونوں پورے کے پورے سؤر ہو کنجر ہو۔تم لوگ اچھی طرح سے واقف ہو کہ انسان کا کونسا بٹن کس وقت پش کرنا چاہیے۔اور میں یہ بھی جانتی ہوں کہ ساگر یہ کمینگی تمہاری ہی پلان کی ہوئی ہے۔تم بہت بڑے خبیث اور کمینے ہو۔اب اٹھو دونوں کیوں مردوں کی طرح پڑے ہوئے ہو۔آپی یہ کہہ کر صوفے کے پاس چلی گئیں اور اپنی چادر اسکارف اور قمیض اتار کر تہہ کر دی آپی نے برا نہیں پہنا ہوا تھا۔ان کے مموں کے نپلز بھی اکڑے اکڑے سے محسوس ہو رہے تھے۔اپنی سگی اور سیکسی بہن کو فل ننگا دیکھنے کے تصور سے ہی ہمارے لن کھڑے ہو گئے۔آپی نے کالے رنگ کی شلوار پہنی ہوئی تھی اور ان کا دودھیا گلابی جسم کالی شلوار میں بہت کھِل رہا تھا۔آپی نے اپنے دونوں ہاتھوں کو اپنی کمر کی سائیڈوں پر رکھ کو شلوار کو پکڑ لیا اور آہستہ آہستہ سے نیچے کی طرف زور لگانے لگیں۔آپی کی شلوار نیچے سرکنا شروع ہو گئی۔جیسے جیسے آپی کی شلوار نیچے اتر رہی تھی۔ہمارے دل جیسے دھڑکنا بھولتے جا رہے تھے۔۔آپی کی شلوار ان کے آدھے کولہوں تک اتر چکی تھی تبھی میں نے آپی کے چہرے کی طرف دیکھا تو وہ میری طرف ہی دیکھ رہی تھیں جیسے ہی ہماری نظریں ملیں تو انہوں نے شرما کر دونوں ہاتھوں سے اپنا چہرہ چھپا لیا اور گھوم گئیں۔میرے منہ سے نکلا ،،،،آپی پلیز،،،،چند لمحے اور خاموشی کی نظر ہوئے تو میں پھر کہہ اٹھا،،،،آپی جان،،،،میری آواز سن کر آپی نے ہماری طرف گھومے بغیر اپنی شلوار پھر اتارنا شروع کر دی۔ان کی گانڈ کی لکیر اور بھرے بھرے ننگے کولہے دیکھ کر مجھ پر نشہ سا چھانے لگا۔اور میں نے اپنا لن مسلنا شروع کر دیا۔آپی تھوڑی دیر رکیں اور پھر جھک کر ایک ہی جھٹکے میں اپنی شلوار کو پاؤں سے نکال دیا اور ہاتھ میں شلوار پکڑے صوفے کی طرف چل دیں۔وہاں جا کر شلوار تہہ کی اور باقی کپڑوں کے ساتھ میز پر رکھ دی اور ہماری طرف پیٹھ کیے کھڑی رہیں۔آپی کے جسم کی ہر چیز بہت تناسب میں تھی۔کمر سے تھوڑا نیچے سے ان کی گانڈ سائیڈ سے باہر کی طرف نکلنا شروع ہو جاتی تھی اور ایک خوبصورت گولائی بناتے ہوئے رانوں سے تھوڑا اوپر وہ گولائی ختم ہو جاتی تھی۔دونوں کولہے پوری گولائی لیے ہوئے مکمل بے داغ اور شفاف تھے۔ان کی رانیں بہت خوبصورت اور باقی جسم کی طرح گلابی رنگت لیے ہوئے تھیں۔متناسب پنڈلیاں اور پیارے پاؤں بھی بہت ہی حسین نظارہ پیش کر رہے تھے۔۔۔۔۔ان کو حرکت نہ کرتے دیکھ کر میں نے کہا کہ آپی پلیز ہماری طرف گھوم جائیں نا!!!!پلیز آپی!!!!میری آواز سنتے ہی آپی نے ایک ہاتھ سے اپنی پھدی کو کور کیا اور سامنے صوفے پر بیٹھ گئیں ان کی آنکھیں بند تھیں۔کمرے میں ہم تینوں کی سانسیں اور ہمارے دھڑکتے ہوئے دلوں کی گونج سنائی دے رہی تھی۔تبھی ناظم بولا آپی آپ نے اصل چیز تو چھپائی ہوئی ہے اپنا ہاتھ ہٹائیے نا۔نہیں مجھے شرم آتی ہے آپی نے ایک ہاتھ سے پھدی اور دوسرے ہاتھ سے اپنا چہرہ چھپائے ہوئے کہا۔تبھی میں نے کہا کہ آپی چلیں شاباش اب ہاتھ ہٹائیں دیکھیں ہم بھی تو آپ کے سامنے ننگے ہی بیٹھے ہیں نا۔میری بات ختم ہوتے ہی آپی نے پھدی پر سے اپنا ہاتھ اٹھایا اور وہ ہاتھ بھی منہ پر رکھ لیا۔۔آپی اپنی ٹانگیں بھی تو کھولیں نا۔۔۔۔ناظم بہت پرجوش ہوتا چلا جا رہا تھا۔۔۔۔تبھی آپی نے چند لمبے لمبے سانس لیے اور اپنے سر کو صوفے کی پشت پر ٹکایا اور اپنی ٹانگیں کھول دیں۔واؤ میرے لیے جیسے دنیا رک سی گئی مجھے دوسری بار ایسا محسوس ہوا کہ میں اپنی زندگی کا حسین ترین منظر دیکھ رہا ہوں۔میں زندگی میں پہلی بار اپنی بہن کی ننگی پھدی وہ بھی بنا کسی روک ٹوک کے دیکھ رہا تھا۔میرا لن بار بار جھٹکے کھا رہا تھا اور مسلسل پانی کے قطرے چھوڑ رہا تھا۔آپی کی پھدی کے اوپری حصے پر بلکل چھوٹے چھوٹے سے بال تھے۔ایسا لگتا تھا جیسے ایک دن پہلے ہی شیو کی ہو۔بال جہاں ختم ہوتے تھے وہاں سے ہی پھدی سٹارٹ ہو رہی تھی۔آپی کی پھدی کے گلابی ہونٹ پھولے پھولے سے تھے۔جس کی وجہ سے پھدی کا اندر کا حصہ نظر نہیں آ رہا تھا۔پھدی کے شروع میں ہلکا سا گوشت باہر ابھرا ہوا تھا جس میں چھپا دانہ بھی نظر نہیں آ رہا تھا۔۔۔۔۔۔آپی آپ دنیا کی سب سے حسین ترین لڑکی ہو۔آپ کے جسم کا ہر حصہ اتنا دلکش ہے کہ مجھ پر مدہوشی سی طاری ہو رہی ہے۔اور میں نے اپنی زندگی میں کبھی بھی اتنا مکمل جسم کسی کا نہیں دیکھا۔۔میں مدہوشی میں بولی جا رہا تھا۔تبھی آپی نے کہا ساگر اب اٹھو اور اپنے نئے کھلونے کو لیکر بیڈ پر جاؤ تم دونوں۔میں نے ٹرانس کی کیفیت میں ناظم کا ہاتھ پکڑا اور ساتھ ہی موجود ڈلڈو کو اٹھایا اور بیڈ کی طرف چل دیے۔بیڈ پر جا کر میں نے اور ناظم نے ڈولڈو کی ایک ایک سائیڈ کو اپنے منہ میں لیا اور چوسنے لگے۔جب وہ تھوک سے اچھی طرح گیلا ہو گیا تو میں نے ناظم کو ڈوگی سٹائل میں جھکنے کا بولا اور خود اٹھ کر اس کی گانڈ کے پاس آ گیا۔اور آہستہ سے ڈولڈو اس کی گانڈ میں ڈالنا شروع کر دیا ڈلڈو میرے لن سے تھوڑا موٹا تھا۔تھوڑی دیر تک ڈلڈو کی چدائی سے ناظم کی گانڈ نرم پڑ چکی تھی۔۔۔اور ڈلڈو آرام سے اندر باہر ہو رہا تھا تبھی میں بھی ڈوگی سٹائل میں ہو گیا اور شرارتی انداز میں آپی کی طرف دیکھ کر مسکرایا تو آپی بھی ہوسناک انداز میں مسکرائی۔اب آپی کی شرم ختم ہو چکی تھی۔اور سیکس کی شدت لالی کی صورت میں ان کے گالوں پر ظاہر ہو رہی تھی۔آپی نے اپنے ایک ہاتھ سے اپنے ممے کو دبوچ رکھا تھا اور دوسرے ہاتھ سے اپنی لال ہوتی ہوئی پھدی کو مسل رہی تھیں۔میں نے ناظم کی گانڈ کے ساتھ اپنی گانڈ ملائی اور اپنا دایاں ہاتھ پیچھے لے جا کر ڈلڈو کے دوسرے سرے کو پکڑ کر اپنی گانڈ میں ڈالنے کی کوشش کرنے لگا۔دو تین منٹ کوشش کرنے کے باوجود بھی میں کامیاب نہیں ہوا۔تو آپی کی طرف دیکھ کر بے چارگی سے کہا آپی یہ پوزیشن آسان نہیں ہے قسم سے میں جان بوجھ کر نہیں کر رہا۔ڈولڈو اندر نہیں جا رہا مجھ سے۔آپی نے کہا کوئی بات نہیں تم آرام سے دوبارہ اندر ڈالنے کی کوشش کرو میں نے پھر کوشش کی لیکن اندر نہیں گیا تو میں نے مایوسی سے آپی کو دیکھتے ہوئے نفی میں سر ہلا دیا۔آپی کچھ دیر ہم کو دیکھتی رہیں پھر پتہ نہیں آپی کو کیا ہوا وہ اپنی جگہ سے اٹھیں اور میرے پاس آ کر ڈلڈو کو ایک ہاتھ سے پکڑا اور دوسرے ہاتھ سے میری گانڈ کھول کر ڈلڈو کا سرا میری گانڈ کے سوراخ پر دبانے لگیں۔ڈلڈو آرام سے اندر اتر گیا۔آپی کا ہاتھ اپنی گانڈ پر محسوس ہوتے ہی میرے منہ سے سسکاری نکل گئی۔آہ ہ آپی آپ کے ہاتھ کا احساس بہت مزہ دے رہا ہے۔آپی نے ڈلڈو کو اندر باہر کرتے ہوئے کہا کہ اچھا اگر یہ بات ہے تو تھوڑا اور مزہ لے لو یہ کہتے ہوئے آپی نے ڈلڈو کو اندر باہر کرتے ہوئے دوسرے ہاتھ سے میرے ٹٹوں پر مساج کرنا شروع کر دیا۔اور بولیں چلو اب دونوں مل کر ایک ساتھ ہی پیچھے کو جھٹکا مارو اور پھر ایک ساتھ ہی آگے کو جانا تا کہ ردھم نا خراب ہو۔یہ کہتے ہوئے آپی نے اپنے ہاتھ سے ڈلڈو کو چھوڑ دیا۔۔۔اچانک مجھے ناظم کی آہ ہ بھری سسکی سنائی دی میں نے گردن موڑ کر دیکھا تو آپی نے دوسرے ہاتھ سے اس کے ٹٹوں کو سہلایا تھا۔آہ ہ آپی جی اف فف ف۔۔۔ہم دونوں کو آپی کے ہاتھوں کا احساس پاگل کیے دے رہا تھا۔اور ہم دونوں تیزی سے اپنے جسموں کو آگے پیچھے کرنے لگے۔جب ہمارا ردھم بن گیا تو آپی نے ہمارے ٹٹوں کو چھوڑا اور صوفے کی طرف جاتے ہوئے بولیں۔اب اپنی مدد آپ کرو میں تم لوگوں کو مزہ دینے نہیں اپنا مزہ لینے ادھر آئی ہوں۔اب ہم دونوں کی سپیڈ تھوڑی کم ہو گئی تھی اور ہم نے آپی کے صوفے پر بیٹھتے ہی اپنی نظریں ان کی پھدی پر جما دیں جو کہ بہت گیلی ہو کر چمک رہی تھی۔آپی نے ہماری طرف دیکھا تو مسکرا کر اپنی ٹانگیں کھول لیں اور اپنی شہادت کی انگلی کے ساتھ والی دو انگلیاں منہ میں لیکر اچھی طرح تھوک لگایا اور انہی دو انگلیوں کے ساتھ اپنی پھدی کا دانہ مسلنے لگیں۔اس سین نے ہم دونوں پر جادو سا کر دیا اور ہم تیزی سے حرکت کرنے لگے۔ہماری گانڈیں تیزی سے آپس میں ٹکرا رہی تھیں اور ڈلڈو پورے کا پورا دونوں گانڈوں میں چھپ جاتا تھا۔آپی نے ہماری حالت سے اندازہ لگا لیا کہ ان کی اس حرکت نے ہم دونوں کو بہت مزہ دیا ہے۔آپی بار بار یہی حرکت کرنے لگیں اور ہم دونوں پاگلوں کی طرح ایک دوسرے کو چودتے رہے ساتھ ساتھ ہم نے اپنے اپنے لن کو پکڑ کر مسلنا شروع کر دیا۔اب آپی اپنی بڑی انگلی کو اپنی پھدی میں ڈال کر انگلی سے خود کو چود رہی تھیں۔ساتھ ہی دوسرے ہاتھ سے اپنے نپلز کو مسلنے لگیں تو کبھی اپنی پھدی کے دانے کو چٹکی میں پکڑ کر کھینچنے اور مسلنے لگتیں۔اب وہ بلا جھجھک پلکیں جھپکائے بغیر ہماری چدائی دیکھ رہی تھیں۔اسی دوران ہی ایک لمبی آہ کے ساتھ ناظم کے لن نے پانی چھوڑ دیا اور وہ ایک جھٹکے سے آگے ہوا اور ڈلڈو کو اپنی گانڈ سے باہر نکال لیا۔اب آدھا ڈلڈو میری گانڈ میں تھا اور آدھا ڈلڈو ہوا میں لٹک رہا تھا۔آپی نے یہ سین دیکھا تو ایک لذت بھری سسکی حلق سے خارج کی اور ساتھ ہی ان کا ہاتھ تیز تیز پھدی پر چلنے لگا۔اور ساتھ ہی آپی نے اپنا سر صوفے کی پشت پر ٹکا کر اپنی آنکھیں بند کر لیں۔یہ دیکھ کر میں نے ڈلڈو اپنی گانڈ سے نکالا اور ان کے پاس جا کر ان کے سامنے ہی بیٹھ گیا میری دیکھا دیکھی ناظم بھی اٹھ کر پاس آگیا۔آپی کی انگلی بڑی سپیڈ سے پھدی میں اندر باہر ہو رہی تھی اور ان کا ہاتھ اور پھدی کے آس پاس کا ایریا ان کے جوس سے چمک رہا تھا۔اچانک آپی نے اپنے سر کو صوفے کی پشت پر دبایا اور ٹانگیں کھلی رکھتے ہوئے اپنے پیر زمین پر جما کر اپنی گانڈ ہوا میں اچھال دی۔اس طرح ان کا جسم کمان کی صورت اکڑ گیا۔ان کے ہاتھ پھدی اور مموں سے ہٹ کر پیٹ پر آ پہنچے۔اب پتہ نہیں یہ ان کے حسین جسم کا نظارہ تھا۔سیکسی ماحول کا اثر تھا یا پھر میری سگی بہن کے جسم سے نکلنے والی خوشبو کا جادو تھا کہ میں ٹرانس کی کیفیت میں آگے بڑھا آپی کے دونوں مموں کو ہاتھوں میں دبوچا اور اپنے ہونٹوں کے ساتھ ان کی پھدی کے دانے کو دبا کر چوس لیا۔آپی کے منہ سے ایک تیز آہ ہ ہ نکلی اور انہوں نے بے ساختہ اپنے دونوں ہاتھوں سے میرے سر کو دبایا اور اپنی پھدی کو میرے منہ پر رگڑنے لگیں۔ناظم میری اس حرکت پر شاک کی کیفیت میں منہ کھولے رہ گیا مگر نا ہی اس نے کوئی حرکت کی اور نا ہی اس کی زبان سے کوئی لفظ نکلا۔آپی کے جسم نے ایک زوردار جھٹکا کھایا اور ان کے منہ سے آواز نکلی،،،،ساگرررررر،،،،،آہ ہ ہ ہ ،،،،،رکو،،،،،اوہ ہ ،،،،میں گئی۔۔۔۔۔۔ان کے جسم کو متواتر جھٹکے لگنے لگے اور وہ میرے منہ کو اپنی پھدی پر دباتی جا رہی تھیں۔ان کی چوت جیسے میرے منہ میں پھڑک رہی تھی۔میں نے زندگی میں پہلی بار کسی پھدی کا ذائقہ چکھا تھا اور اسی لمحے مجھے پتہ چلا کہ پھدی کے پانی کا کوئی ٹیسٹ نہیں ہوتا۔جو ہم نمکین نمکین محسوس کرتے ہیں وہ دراصل پسینہ ہوتا ہے۔آپی مکمل طور پر میرے منہ پر ہی ڈسچارج ہو چکی تھیں اور ان کے پانی کے چند قطرے میرے منہ میں بھی گئے تھے۔جن کو امرت سمجھ کر میں نگل گیا۔آپی کا جسم زرا سکون میں آیا تو ان کو ادراک ہوا کہ کیا ہو چکا ہے تو وہ ایک دم سے اپنے چہرے کو ہاتھوں میں چھپا کر کہنے لگیں ساگررررر یہ تم نے کیا کر دیا یہ بہت غلط ہوا ہے اور ساتھ ہی پشیمانی کا احساس آنسو بن کر ان کی آنکھوں سے بہہ نکلا۔میں بے اختیار بولا کہ آپی جس طرح آپ کا جسم اکڑ رہا تھا مجھے لگا کہیں آپ کا نروس بریک ڈاؤن نا ہو جائے اور ویسے بھی وہ وقت کی ڈیمانڈ تھی۔میں آپ کو یوں اپنے مموں اور پھدی کو بھنبھوڑ تے دیکھ کر رہ نا سکا اور اپنی پیاری آپی کو منزل پہنچانے کیلئے آگے بڑھ آیا۔یہ کہہ کر میں آگے بڑھا اور آپی کے ساتھ ہی صوفے پر بیٹھ کر ان کے سر کو اپنے سینے سے لگا لیا اور دوسرا بازو ان کی ننگی کمر سے پیچھے کرتے ہوئے ان کے کندھے پر رکھ کر انہیں خود میں بھینچ لیا اور دکھی لہجے میں بولا آپی اب پلیز آپ رو مت ورنہ میں بھی رو دوں گا اور آپ تو جانتی ہیں نا کہ میں آپ کی آنکھوں میں آنسو نہیں دیکھ سکتا۔آپی نے سر اٹھایا تو ان کی آنکھوں میں ایک چمک سی لہرائی اور وہ بولیں مجھ پاگل کو پتہ ہی نہیں تھا کہ میرا بھائی مجھ سے اتنا پیار کرتا ہے اور ساتھ ہی اپنے مموں کو میرے سینے پر رگڑنے لگیں۔میں نے اس وقت اپنے دل و دماغ میں آپی کیلئے شدید محبت محسوس کی اور پتہ نہیں کس جذبے کے تحت میں ان کے ہونٹوں پر جھکتا گیا اور اپنے ہونٹ آپی کے ہونٹوں سے ملا دیے۔ان کے ہونٹ نرم نرم تھے میں نے آپی کے اوپر والے ہونٹ کو چوسنا شروع کیا تو لگا جیسے گلاب کی پنکھڑی کو چوم رہا ہوں۔اوپر والے ہونٹ کو چوسنے کے بعد میں نچلے ہونٹ کو چوسنے لگا تو آپی نے میرا اوپر والا ہونٹ اپنے منہ میں لے لیا اور مدہوشی کی کیفیت میں چوسنے لگیں۔آپی نے اپنے جسم کو میرے ہاتھوں میں بلکل ڈھیلا چھوڑ دیا تھا۔اب آپی نے اپنی زبان کو میرے منہ میں داخل کر دیا تھا اور میں بے اختیار ان کی زبان چوستا چلا جا رہا تھا۔میں نے اپنے ہاتھ کو آپی کے مموں پر رکھا اور ممے دباتے ہوئے بڑی نرمی سے ان کے نپل کو مسلا تو سسسسسسسییییی کی آواز آپی کے حلق سے بر آمد ہوئی اور میرے منہ میں ہی گم ہو گئی۔میں اپنا ہاتھ آپی کے مموں پر پھیرتے ہوئے نیچے لیجانے لگا۔جیسے ہی میں نے اپنے ہاتھ سے اپنی بہن کی پھدی کے دانے کو چھوا تو آپی نے ایک دم آنکھیں کھول دیں اور مچلتے ہوئے زور لگا کر مجھے خود سے دور کر دیا۔اور متوحش لہجے میں کہنے لگیں۔۔۔نہیں ساگر نہیں یہ نہیں ہونا چاہیے۔۔۔۔۔اور اٹھ کر فٹا فٹ اپنی قمیض پہننے لگیں۔میں نے آپی کی کیفیت کو سمجھتے ہوئے کچھ کہنا مناسب نہیں سمجھا۔وہ پہلے ہی بہت شرمندگی محسوس کر رہی تھیں۔میں اور ناظم آپی کو کپڑے پہنتے دیکھتے رہے اور وہ چپ چاپ کپڑے پہن کر تیز تیز قدموں کے ساتھ کمرے سے نکل گئیں۔میں اپنے اوپر چھائے نشے کو توڑنا نہیں چاہتا تھا۔آپی کے جسم کی خوشبو ابھی بھی میری سانسوں میں بسی ہوئی تھی اور میں اسے کھونا نہیں چاہتا تھا اس لیے ناظم کو سونے کا اشارہ کر کے کمرے کا دروازہ بند کیا اور خود بھی لیٹ گیا۔اور اپنے لن کو ہاتھ میں پکڑ کر آنکھیں بند کیے آپی کے ساتھ ہوئے کھیل کے بارے میں سوچتے ہوئے لن سہلانے لگا۔جلد ہی میرے لن نے بھی پانی چھوڑ دیا اور مجھ میں اتنی ہمت بھی نہ رہی کہ اپنی صفائی کر سکوں اور میں اسی طرح لیٹے لیٹے نیند کی وادیوں میں کھو گیا۔۔۔۔۔۔

  4. The Following 9 Users Say Thank You to javaidbond For This Useful Post:

    Admin (12-07-2018), hananehsan (12-07-2018), lastzaib (12-07-2018), Mirza09518 (12-07-2018), mm.khan (12-07-2018), saqi870 (12-07-2018), sweetncute55 (Yesterday), sweettyme (12-07-2018), Wine Eyes (12-07-2018)

  5. #44
    Join Date
    Jan 2008
    Location
    In Your Heart
    Posts
    3,518
    Thanks
    2,429
    Thanked 10,443 Times in 1,816 Posts
    Time Online
    1 Week 4 Days 6 Hours 4 Minutes 4 Seconds
    Avg. Time Online
    6 Minutes 48 Seconds
    Rep Power
    3184

    Default

    واہ میرے شیر کیا کمال کا اپ ڈیٹ دیا ہے

  6. The Following User Says Thank You to Admin For This Useful Post:

    adiladil (Yesterday)

  7. #45
    lastzaib is offline Premium Member
    Join Date
    Jul 2009
    Posts
    33
    Thanks
    90
    Thanked 44 Times in 24 Posts
    Time Online
    6 Days 14 Hours 45 Minutes 3 Seconds
    Avg. Time Online
    3 Minutes 59 Seconds
    Rep Power
    14

    Default

    Kia likhtay ho yar, baghair hat lagaye hi pani nikal jayee. Keep it up

  8. #46
    mm.khan is offline Premium Member
    Join Date
    Aug 2012
    Posts
    105
    Thanks
    415
    Thanked 271 Times in 90 Posts
    Time Online
    4 Days 9 Hours 7 Minutes 32 Seconds
    Avg. Time Online
    2 Minutes 55 Seconds
    Rep Power
    17

    Default

    Bht mazaydar fantasy story hay keep it up

  9. #47
    Wine Eyes is offline Aam log
    Join Date
    Apr 2013
    Location
    Islamabad
    Age
    31
    Posts
    9
    Thanks
    679
    Thanked 34 Times in 8 Posts
    Time Online
    5 Days 10 Hours 33 Minutes 5 Seconds
    Avg. Time Online
    4 Minutes 3 Seconds
    Rep Power
    7

    Default

    is story ka roman men link send kar den

  10. #48
    javaidbond is offline Aam log
    Join Date
    Dec 2014
    Age
    31
    Posts
    40
    Thanks
    1
    Thanked 144 Times in 31 Posts
    Time Online
    13 Hours 35 Minutes 45 Seconds
    Avg. Time Online
    37 Seconds
    Rep Power
    9

    Default

    سب دوستوں کا شکریہ اور جناب یہ آپ لوگوں کی حوصلہ افزائی ہی ہوتی ہے جو ہمیں لکھنے پر اکساتی ہے۔ورنہ لکھنے والے جانتے ہیں لکھنا بہت ہی مشکل طلب کام ہے۔۔۔
    Wine eyes
    سر میرے پاس یہ سٹوری رومن اردو میں پی ڈی ایف فائل کی شکل میں ہے لنک کیسے بھیج دوں آپ بس یہاں آتے رہیں اپ ڈیٹس ملتی رہیں گی۔

  11. The Following User Says Thank You to javaidbond For This Useful Post:

    adiladil (Yesterday)

  12. #49
    pagalsallu is offline Aam log
    Join Date
    Mar 2016
    Age
    32
    Posts
    13
    Thanks
    0
    Thanked 8 Times in 6 Posts
    Time Online
    12 Hours 23 Minutes 32 Seconds
    Avg. Time Online
    51 Seconds
    Rep Power
    5

    Default

    بہترین۔ مکمل ماحول کے ساتھ لکھ رہے ہو

  13. #50
    mm.khan is offline Premium Member
    Join Date
    Aug 2012
    Posts
    105
    Thanks
    415
    Thanked 271 Times in 90 Posts
    Time Online
    4 Days 9 Hours 7 Minutes 32 Seconds
    Avg. Time Online
    2 Minutes 55 Seconds
    Rep Power
    17

    Default

    Bhai jan waitimg for next

Page 5 of 7 FirstFirst 1234567 LastLast

Bookmarks

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •